امریکی ریاست ورجینیا میں نسلی تشدد کا نیا واقعہ، ایک اور سیاہ فام کو پولیس نے گولی مار دی، اہلکار کیخلاف مقدمہ درج

  امریکی ریاست ورجینیا میں نسلی تشدد کا نیا واقعہ، ایک اور سیاہ فام کو پولیس ...

  

ورجینیا (مانیٹرنگ ڈیسک،آن لائن) امریکہ میں پولیس اہلکار نے ایک اور سیاہ فام کو گولی مار دی، اہلکار نے اس کو زمین پر گرا کر اس کی گردن کو دبا دیا، پولیس اہلکار کیخلاف مقدمہ درج کرلیا گیا۔تفصیلات کے مطابق امریکی ریاست ورجینیا کے فیئر فیکس کاونٹی میں سیاہ فام شخص پر پولیس تشدد کا ایک اور واقعہ پیش آیا ہے، امریکہ سمیت کئی ممالک میں سیاہ فام شخص جارج فلائیڈ کی موت کیخلاف مظاہروں کا سلسلہ ابھی تھما بھی نہیں تھا کہ ایک دوسرا ویڈیو بھی سامنے آ گیا۔ویڈیو میں ٹائلر ٹمبرلاک نامی امریکی پولیس اہلکار نے ایک سیاہ فام امریکی شہری کو اسٹن گن سے گولی مار دی، یہ واقعہ امریکی ریاست ورجینیا کے فیئر فیکس کاؤنٹی میں پیش آیا۔ گن سے فائر کرنے کے بعد سیاہ فام شخص زمین پر گر گیا اورحادثے کا ویڈیو پولیس افسر کے یونیفارم میں لگے ہوئے کیمرے میں محفوظ ہو گیا گن لگنے کے بعد زمین پر گرے شخص کے اوپر چڑھ کر پولیس اہلکار ٹمبرلاک نے اس کی گردن کے پیچھے حصے پر دبایا اور دوبارہ گولی ماردی جس سے وہ شدید زخمی ہوگیا۔اس حوالے سے فیئر فیکس کاؤنٹی کے پولیس چیف ایڈون سی روزلر جونیئر کا کہنا ہے کہ کسی شخص نے پولیس کو اطلاع دی تھی کہ ایک شخص سڑک پر جا رہا تھا اور یہ آواز دے رہا تھا کہ اسے آکسیجن کی ضرورت ہے۔پولیس چیف نے مزید کہا کہ یہ بات واضح نہیں ہے کہ ٹمبرلاک نے اس شخص پر اپنی اسٹین گن کیوں استعمال کی فیئر فیکس کاؤنٹی پولیس انتظامیہ نے بتایا ہے کہ پولیس اہلکار ٹائلر ٹمبر لاک کے خلاف سیاہ فام شخص پر اسٹن گن استعمال کرنے سے متعلق مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔ پولیس کے مطابق اس زخمی شخص کا اسپتال میں علاج کیا گیا اور اس کے بعد چھٹی دے دی گئی۔خیال رہے کہ گذشتہ 25 مئی کو امریکی ریاست مینی سوٹا کے مینی پولیس شہر میں پولیس اہلکار کی جانب سے ایک سیاہ فام کا گلا گھونٹے جانے کے سبب 46 سالہ جارج فلائیڈ کی موت ہو گئی تھی، جس کی وجہ سے اب تک امریکہ سمیت دنیا کے متعدد ممالک میں احتجاجی مظاہرے ہورہے ہیں منی ایپلیس کے ایک جج نے پولیس آفیسر ڈیرک چوون کو 46 سالہ افریقی نژاد امریکی شہری جارج فلائیڈ کے قتل کے الزام میں اپنی پہلی عدالت میں پیشی پر 10 لاکھ ڈالر کی ضمانت مقرر کردی۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق جیل کے لباس میں ملبوس 44 سالہ ڈیرک چوون قتل کے الزام میں عدالت میں پیش ہوئے اور وکلا کے سوالات کے جوابات دیے۔ہینے پن کانٹی ڈسٹرکٹ کورٹ کے جج جینیس ریڈنگ نے ان کی مشروط ضمانت کے لیے دس لاکھ ڈالر اور غیر مشروط ضمانت کے لیے 12 لاکھ 50 ہزار ڈالر کی رقم مقرر کی۔شرائط کو پورا کرنے کے لیے ملزم کو اپنے ہتھیار واپس کرنے، قانون نافذ کرنے والے اداروں یا کسی بھی سیکیورٹی ادارے میں کسی بھی عہدے پر کام نہ کرنے، ریاست نہ چھوڑنے پر متفق ہونے اور فلائیڈ کے اہل خانہ سے کوئی رابطہ نہیں رکھنے کی ضرورت ہوگیامریکہ کی ریاست ٹیکساس کے شہر ہیوسٹن میں ہزاروں افراد نے جارج فلائیڈ کی آخری رسومات میں شرکت کی اور ان کا آخری دیدار کیاہے۔ جارج فلائیڈ کا تابوت ایک چرچ میں رکھا گیا تھا جہاں لوگ جوق درجوق آ کر انہیں خراجِ عقیدت پیش کرتے رہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق جارج فلائیڈ کے آخری دیدار کے لیے آنے والے بیشتر لوگوں نے کرونا وائرس سے بچاو کے لیے ماسک بھی لگائے ہوئے تھے۔ تھا۔

جارج فلائیڈ

مزید :

صفحہ اول -