افسوس کی بات ہے حکومت عوام کو پٹرول بھی نہیں دے سکتی،پشاورہائی کورٹ

  افسوس کی بات ہے حکومت عوام کو پٹرول بھی نہیں دے سکتی،پشاورہائی کورٹ

  

پشاور(این این آئی)پشاورہائیکورٹ نے پٹرول بحران کانوٹس لے لیا،عدالت عالیہ کے جسٹس قیصر رشید نے ایڈوکیٹ جنرل خیبر پختونخوا کو طلب کر لیا۔تفصیلات کے مطابق پٹرول بحران پر پشاورہائی کورٹ نے نوٹس لیے لیا، جسٹس قیصر رشید نے ایڈوکیٹ جنرل خیبر پختونخوا کو طلب کر لیا۔جسٹس نے قیصر رشید نے ایڈووکیٹ جنرل شمائل احمد بٹ سے استفسارکرتے ہوئے کہا افسوس کی بات ہے حکومت عوام کو پٹرول بھی نہیں دے سکتی، پمپس والے پٹرول نہیں دیتے، کہتے ہیں کہ ہمیں بھی مل نہیں رہا،آخر کون ذمہ دار پٹرول بحران کا۔اے جی نے کہا کہ اوگرا کا کام ہے وہی ذمہ دار ہے،جسٹس نے کہا آٹا کا بھی بحران ہے اس کا کیا بنا،جس پر ایڈوکیٹ جنرل نے کہا وزیراعلی نے وزیراعظم کے ساتھ آٹا بحران پر بات کی ہے، وزیراعظم نے پنجاب کے وزیراعلی کے ساتھ معاملہ اٹھایا ہے، کل سے پنجاب حکومت نے رکاوٹیں ہٹانا شروع کی ہیں اب کے پی کو گندم کی سپلائی بحال کردی ہے،15 جون تک آٹا کی قیمت بھی معمول پر آجائے گی، جس پر جسٹس قیصر رشید نے کہا پھر یوٹرن نہیں لینا مہربانی کریں، پٹرول بحران پر بھی اوگرا سے بات کرے اور اس مسلے کا حل نکالیں۔

پشاورہائ

مزید :

صفحہ آخر -