شبقدر میں ٹرانسپورٹرز کا اڈوں کی منتقلی کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

شبقدر میں ٹرانسپورٹرز کا اڈوں کی منتقلی کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

  

شبقدر (نمائندہ خصوصی) شبقدر بازار میں ٹرانسپورٹروں کا اختجاجی مظاہرہ۔ ٹرانسپورٹ اڈوں کی ٹی ایم اے شبقدر کی حدود سے کئی کلومیٹر باہر منتقلی مسترد کرتے ہیں نیا اڈہ ٹی ایم اے حدود سے باہر ویران جگہ پر بنایا جا رہا ہے جگہ ناکافی اور سہولیات دستیاب نہیں شبقدر کے گنجان آباد بازار کے دو بڑے ٹرانسپورٹ اڈوں کا پشاور روڈ اوچہ ولہ کے مقام پر منتقلی کے خلاف شبقدر مہمند ٹرانسپورٹ یونین کے عہدیداروں ملک قلندر خان ملک روح الامین خان۔ جاوید حلیم زئی سید امین خان اور دیگر کے علاوہ گاڑی مالکان اور عوامی حلقوں نے شبقدر بازار میں اڈوں کے سامنے اختجاجی مظاہرہ کیا مظاہرین نے اختجاج کے طور پر اڈے بند کر دئیے جس کے باعث قبائلی اضلاع مہمند باجوڑ چارسدہ تنگی اور پشاور جانے آنے والے ہزاروں مسافروں کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ٹرانسپورٹروں نے کہا کہ ٹی ایم اے شبقدر کی حدود سے باہر ویران جگہ پر جہاں سہولیات فراہم نہیں جبکہ ٹرانسپورٹ اڈوں کی بازار سے ویران جگہ پر غیر قانونی منتقلی کے خلاف شبقدر بازار کے تاجر برادری اور دوکاندار یونین نے مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے حکومت سے فوری فیصلہ واپس کرنے کا سختی سے مطالبہ کیا جبکہ مظاہرین نے میڈیا کے نمائندوں کو بتایا کہ پی ٹی آئی کے ایک کارکن کی مفاد کیلئے اڈے کو شہر سے ویران جگہ منتقل ہونے پر ہزاروں گاڑی مالکان مہمند باجوڑ چارسدہ تنگی پشاور اور ملک کے دیگر حصوں کے لاکھوں عوام کو سخت مشکلات کا سامنا ہو گا اختجاجی مظاہرے کے بعد اوچہ ولہ کے رہائشی ملک واجد ولد ملک فضل نے بھی شبقدر میڈیا سنٹر میں تفصیلات بیان کرتے ہوئے کہا کہ نیا تعمیر ہونے والا ٹرانسپورٹ اڈا زبردستی تعمیر کیا جا رہا ہے یہ ہماری ملکیت ہے اس پر ہم نے اسسٹنٹ کمشنر شبقدر کی عدالت میں کیس دائر کیا تھا اسسٹنٹ کمشنر شبقدر نے مذکورہ ٹرانسپورٹ اڈہ پر سٹے آرڈر دیا ہیں انہوں نے کہا کہ نیا تعمیر ہونے والا ٹرانسپورٹ اڈا کی منتقلی روک دی جائے شبقدرٹرانسپورٹ اڈوں کے عہدیداروں اور گاڑی مالکان نے اعلی عدالتوں دیگر متعلقہ اداروں سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ شبقدر بازار سے باہر غیر قانونی طور پر ٹرانسپورٹ اڈوں کی منتقلی کا سختی سے نوٹس لیں اور موجودہ ٹرانسپورٹ اڈوں کو بحال کرنے کے احکامات جاری کرے کیونکہ نیا اڈہ جانی مالی اعتبار سے غیر محفوظ ہیں مطالبات نہ ماننے پر صوبہ گیر پہیہ جام ہڑتال اور اختجاجی دھرنے شروع کرینگے

مزید :

پشاورصفحہ آخر -