باڑہ‘ تیراہ سڑک تنازعہ‘ 15 گاڑیاں بند ڈیڑھ کروڑ کا نقصان

باڑہ‘ تیراہ سڑک تنازعہ‘ 15 گاڑیاں بند ڈیڑھ کروڑ کا نقصان

  

باڑہ (نمائندہ پاکستان)ضلع خیبر تیراہ سڑک کی تعمیر میں حکومت اور ٹھیکہ دار کے مابین تنازعہ میں ہماری گاڑیاں 16 ماہ سے بند پڑی ہے، جس سے ہمیں ابتک ڈیڑھ کروڑ روپے تک نقصان ہوا ہے، اگر ہمیں 14جون تک گاڑیاں واپس نہ کی گئی تو ہم پاک افغان شاہراہ کو ہر قسم ٹریفک کیلئے بند کر دینگے، یہ باتیں جانب آفریدی و دیگر گاڑیوں کے مالکان نے باڑہ پریس کلب میں ایک مشترکہ پریس کانفرنس میں کی۔ انہوں نے کہا کہ خیبر تیراہ تا اورکزئی سڑک کی تعمیر میں ہماری 13 مختلف چھوٹی بڑی گاڑیاں سیکورٹی فورسز اور فیاض نامی ٹھیکہ دار کے مابین تنازعہ میں ہم سے لے کر بند کر دی گئی ہے جسکی وجہ سے پچھلے 16 ماہ سے ہم 35 افراد کے خاندان کا روزگار ختم ہوا ہے۔ مشترکہ پریس کانفرنس میں انہوں نے چیف آف آرمی سٹاف سے اپیل کی کہ ہماری گاڑیاں ہمیں دے تاکہ ہم اپنی حلال روزی کما سکے۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ہم نے MNA اور MPAسے بار بار اپیل کی مگر تاحال کوئی شنوائی نہیں ہوئی البتہ حمیداللہ جان آفریدی اور معروف نے ہماری ساتھ بہت مدد کی۔ پریس کانفرنس کے دیگر شرکا میں حشمت اورکزئی، وسیم مشتاق اور نجیب اللہ سمیت دیگر شامل تھے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -