قتل کیس میں گواہوں کی موجودگی ثابت نہ ہو تو ملزم کو سزائے موت نہیں دی جا سکتی: لاہور ہائیکورٹ 

قتل کیس میں گواہوں کی موجودگی ثابت نہ ہو تو ملزم کو سزائے موت نہیں دی جا سکتی: ...

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائیکورٹ نے سزائے موت کے 2 قیدیوں مطلوب احمد اور محمد رشیدکوبری کرنے کا حکم دے دیا۔ مسٹر جسٹس سردار احمدنعیم اور مسٹرجسٹس شہرام سرور چودھری پر مشتمل ڈویژن بنچ نے اس سلسلے میں ان قیدیوں کی اپیل منظور کرتے ہوئے قراردیا کہ گواہوں کی موقع پر موجودگی ثابت نہ ہو تو ملزموں کو سزائے موت نہیں دی جاسکتی،اپیل کنندگان کی طرف سے چودھری عثمان نسیم ایڈووکیٹ نے موقف اختیار کیا تھا کہ ٹرائل کورٹ قصور نے میرٹ سے ہٹ کر مجرموں کو موت کی سزا سنائی، جو گواہ پیش کئے گئے، ان کی موقع پر موجودگی ثابت نہیں ہوئی، اپیل کنندگان کی مقتولین طارق اور شازیہ بی بی کے ساتھ دیرینہ دشمنی کی بنا پرانہیں اس مقدمہ میں ملوث کیاگیا، یہ طے شدہ امر ہے کہ ملزموں کے خلاف عینی شاہدین کے طور پرپیش ہونے والے افراد کی موقع پر موجودگی ثابت نہیں ہوتی،عدالت سے دلائل سننے کے بعد دونوں قیدیوں کو بری کرنے کاحکم دے دیاہے۔

ملزم بری

مزید :

صفحہ آخر -