پسند کی شادی کرنیوالی لڑکیوں کو تحفظ دینے سے متعلق کیس،ایس ایس پی آپریشنز اسلام آباد کل ذاتی حیثیت میں طلب

پسند کی شادی کرنیوالی لڑکیوں کو تحفظ دینے سے متعلق کیس،ایس ایس پی آپریشنز ...
پسند کی شادی کرنیوالی لڑکیوں کو تحفظ دینے سے متعلق کیس،ایس ایس پی آپریشنز اسلام آباد کل ذاتی حیثیت میں طلب

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)اسلام آبادہائیکورٹ نے پسند کی شادی کرنے والی لڑکیوں کو تحفظ دینے سے متعلق کیس میں ایس ایس پی آپریشنز اسلام آباد کو کل ذاتی حیثیت میں طلب کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائیکورٹ میں پسند کی شادی کرنے والے والی بچیوں کو تحفظ دینے سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی،ڈپٹی اٹارنی جنرل طیب شاہ نے کہاکہ عدالتی حکم پر لڑکی کا میڈیکل کروایاگیا،چیف جسٹس اطہر من اللہ نے استفسار کیا کہ ایس ایچ او صاحب آپ نے کیا انوسٹی گیشن کی؟،ایس ایچ او نے کہاکہ جنوری کو لڑکی نے شادی کی، فیس بک پر لڑکے سے 5سال پہلے رابطہ کیا،چیف جسٹس ہائیکورٹ نے ریمارکس دیتے ہوئے کہاکہ آپ کا کام یہ تفتیش کرنا نہیں ہے۔

چیف جسٹس اطہر من اللہ نے استفسار کیا کہ عدالت کو یہ بتائیں کہ لڑکی کا خاوند کہاں ہے؟،ایس ایچ او نے عدالت میں جواب دیا کہ لڑکی کا خاوند نہیں ملا،چیف جسٹس ہائیکورٹ نے کہاکہ یہ کوئی طریقہ نہیں ہے ایس ایس پی نے کیا انوسٹی گیشن کی؟ ،ایس ایس پی آپریشنز کو ذاتی حیثیت میں طلب کرتے ہیں ،یہ کوئی طریقہ نہیں ایک شخص غائب ہے ،اب آپ لوگ ذمہ دار ہیں ،کوئی انسان ہیں جو آکر آپ کو کہہ رہے ہیں ہماری جانوں کو خطرہ ہے ،عدالت نے ایس ایس پی آپریشنز اسلام آباد کو کل ذاتی حیثیت میں طلب کر لیا۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -