کورونا کے شدید بیمار مریضوں کو فوری وینٹی لیٹر پر منتقل نہ کیا جائے کیونکہ ۔۔۔پروفیسر جاوید اکرم نے بڑی وجہ بتادی

کورونا کے شدید بیمار مریضوں کو فوری وینٹی لیٹر پر منتقل نہ کیا جائے کیونکہ ...
کورونا کے شدید بیمار مریضوں کو فوری وینٹی لیٹر پر منتقل نہ کیا جائے کیونکہ ۔۔۔پروفیسر جاوید اکرم نے بڑی وجہ بتادی

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز کے وائس چانسلر پروفیسر  ڈاکٹرجاوید اکرم نے کہا ہے کہ کورونا کے شدید بیمار مریضوں کو فورا وینٹی لیٹر پر منتقل نہ کیا جائے، وینٹی لیٹر پر ڈالنے کا مطلب 99 فیصد موت ہے۔

نجی ٹی وی کے مطابق وائس چانسلر یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز پروفیسرجاوید اکرم نے پریس بریفنگ میں کہا کوروناکے شدید بیمار مریضوں کوفوراًوینٹی لیٹر پر منتقل نہ کیاجائے، وینٹی لیٹر پر ڈالنے کا مطلب 99 فیصد موت ہے، سب سے زیادہ ضرورت تربیت یافتہ ہیلتھ ورکرز کی ہے۔ایکٹیمرا انجکشن کے حوالے سے پروفیسر جاوید اکرم کا کہنا تھا کہ، ایکٹیمرا دوا بلیک ہونا شروع ہو چکی ہے، اس برینڈ نیم کو پروموٹ نہ کیا جائے، اس کے متبادل دوائیں موجود ہیں، فزیشنزکوفیصلہ کرنے دیں۔وائس چانسلر یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز نے کہا یہ افواہ غلط ہے کہ کورونا سب کوہوکررہے گا، ابھی تک 20 فیصد لوگ بھی اس کا شکار نہیں ہوئے۔ان کا کہنا تھا کہ اپنے ہیلتھ کئیر ورکرز کی جانیں بچانے کیلئے چین کی مثال کی پیروی کریں، ہیلتھ کئیر ورکرز کے حفاظتی لباس کے سات حصار ہونے چاہئیں۔

پروفیسر جاوید اکرم نے کہا کہ کورونا میں انسان کا اپنا مدافعتی نظام بعض اوقات پھپھڑوں میں سوزش پیدا کردیتا ہے، جو اینٹی باڈیز آپ میں بن گئیں وہ بیماری کے بعد آپ کے کام کی نہیں، اس لیے ان اینٹی باڈیز کو پلازما کی شکل میں عطیہ کر دیں۔ان کا کہنا تھا کہ اگر کورونا کی علامات نہیں  ہیں تو ٹیسٹ کرانے کی ضرورت نہیں، کورونا کابلاوجہ ٹیسٹ کراکر لوگوں کی تجوریاں نہ بھریں۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -کورونا وائرس -