ٹی 20 ورلڈکپ ہو گا یا نہیں? فیصلے کی گھڑی آ گئی

ٹی 20 ورلڈکپ ہو گا یا نہیں? فیصلے کی گھڑی آ گئی
ٹی 20 ورلڈکپ ہو گا یا نہیں? فیصلے کی گھڑی آ گئی

  

دبئی (ڈیلی پاکستان آن لائن) آسٹریلیا میں رواں برس ٹی 20 ورلڈکپ کا میلہ سجے گا یا نہیں? اس کا فیصلہ آج انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) کی ٹیلی کانفرنس میں کیا جائے گا جبکہ اس کے علاوہ بھی کچھ اہم ترین فیصلے ہوں گے۔ 

تفصیلات کے مطابق آئی سی سی  بورڈ میٹنگ 28 مئی کو ہوئی تھی مگر حیران کن طور پر چیئرمین ششانک منوہر نے اہم معاملات کے افشا ہونے کو جواز بناکر اسے 10 جون تک موخر کردیا تھا۔ کورونا وائرس کی وجہ سے 3 ماہ سے کرکٹ سرگرمیاں معطل ہیں، جس سے فیوچر ٹور پروگرام شدید متاثر ہوا اور ممبر بورڈز کیلئے ری شیڈولنگ ڈراؤنا خواب بنی چکی جبکہ  ٹی 20 ورلڈ کپ کا فیصلہ بھی بدستور تاخیر کا شکار ہے۔

اجلاس میں رواں برس اکتوبر، نومبر میں آسٹریلیا میں شیڈول میگا ایونٹ کے وقت پر انعقاد یا ملتوی کرنے کا فیصلہ متوقع ہے، ملتوی ہونے کی صورت میں نئی تاریخوں پر بھی غور ہوگا۔بھارتی کرکٹ بورڈ کے خازن ارون دھمل نے اس حوالے سے کہاکہ اگر ورلڈ کپ اس برس نہیں ہوا تو دیکھنا ہوگا کہ نئی تاریخ کیا ہوتی ہے، کیا اسے 2022 ء تک منتقل کرنے کا فیصلہ کیا جائے گا یا پھر آسٹریلیا میں ایونٹ آئندہ برس اور ہمارے ملک میں ٹورنامنٹ 2022ء  میں منعقد کرنے کا فیصلہ کیا جاتا ہے۔

آسٹریلیا خود بھی اپنے ملک میں رواں سال ایونٹ کے انعقاد پر غیریقینی ظاہر کرچکا ہے، اگر ایونٹ ملتوی ہوا تو پھر ریونیو کی تقسیم بھی متاثر ہوگی، پہلے ہی چھوٹے بورڈز کو یہ فکر کھائے جارہی ہے کہ آئی سی سی انہیں ستمبر کی قسط جاری کرے گی یا  نہیں، بورڈ میٹنگ میں اس بارے بھی غور کیا جائے گا کہ ریونیو میں حصے کی ادائیگی موخرہو یا بورڈز کی مالی پریشانیوں کو مدنظر رکھتے ہوئے ایڈوانس میں رقم جاری کردی جائے۔

اسی طرح باہمی سیریز کا معاملہ بھی کافی گمبھیر ہوچکا، کئی سیریز ملتوی ہوگئیں جنہیں ری شیڈول کرنا کسی ڈراؤنے خواب سے کم نہیں ہوگا، اس وقت کچھ بورڈز کو فیوچر ٹور پروگرام واضح نہ ہونے کی وجہ سے نئی نشریاتی ڈیلز میں بھی مشکلات کا سامنا ہے۔

مزید :

کھیل -