کیا  کووڈ 19 سرکاری ایپ غیر محفوظ ہے؟پاکستان نے ایسی حقیقت بیان کر دی کہ غیر ملکی محقق بھی منہ دیکھتے رہ جائیں گے

کیا  کووڈ 19 سرکاری ایپ غیر محفوظ ہے؟پاکستان نے ایسی حقیقت بیان کر دی کہ غیر ...
کیا  کووڈ 19 سرکاری ایپ غیر محفوظ ہے؟پاکستان نے ایسی حقیقت بیان کر دی کہ غیر ملکی محقق بھی منہ دیکھتے رہ جائیں گے

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) حکومت پاکستان نے کووڈ 19 کی سرکاری ایپ کو غیر محفوظ قرار دینے کے فرانسیسی سیکیورٹی محقق کے دعوے کو مسترد کر دیا۔

نیشنل انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ (این آئی ٹی بی) کا اپنے بیان میں کہا ہے کہ سرکاری ایپ میں سیکیورٹی سے متعلق کوئی عیب یا خرابی نہیں ہے، اس ایپ کا مقصد پورے ملک میں وینٹی لیٹرز کی قریبی دستیابی سے متعلق آگاہی فراہم کرنا ہے۔ فرانسیسی محقق کے دعوے کی تردید کرتے ہوئے این آئی ٹی بی نے کہا کہ اس ایپ کا مقصد چونکہ کورونا وائرس کا پھیلاؤ روکنا ہے لہذا اس کےذریعےصارف کی صرف محدودمعلومات ہی حاصل کی جاتی ہے۔این آئی ٹی بی کا کہنا تھا  کہ یہ ایپ متاثرہ صارف کی موجودہ لوکیشن نہیں بتاتی بلکہ جو مریض خود سے بیمار ہونے کی تصدیق کر چکے ہوتے ہیں،انکی نشاندہی10میٹرکےفاصلےسےکرتی ہے ، باقی جو قرنطینہ میں ہوتےہیں انکی نشاندہی 300میٹرکےفاصلے سےہوتی ہے لہذاجو مریض ہیں انھوں نے خود اپنی مرضی سے رابطہ کرنے کی اجازت دی ہے تاکہ دوسرے شہریوں کومحفوظ رکھا جائے۔

این آئی ٹی بی نے مزید کہا کہ اس کے علاوہ تمام صارفین ایپ کی شرائط و ضوابط کو مکمل طور پر تسلیم کر چکے ہیں، کسی صارف کا لاگ ان مکینزم،ایپ میں موجود نہیں،یہی وجہ ہےکہ لاگ اِن اور پاسورڈ کا استعمال ایپ ورک فلو کا حصہ نہیں، واضح کیا گیا سکرین شاٹ ہارڈ کوڈ پاسورڈ آٹو ٹوکن اینڈ پوائنٹ کی سیکیورٹی کے لیے دیا گیا تاکہ اینڈ پوائنٹ صرف ایپ سے ہی استعمال ہو۔این آئی ٹی بی نے بتایا کہ ہماری تمام ایپلیکیشن HTTPS کو استعمال کرتے ہوئے چلتی ہیں لہذا صارفین کے ڈیٹا کا تحفظ بین الاقوامی معیار کو اپناتے ہوئے کیا جاتا ہے کیونکہ یہ بنیادی اہمیت کا حامل ہے۔

واضح رہے کہ فرانسیسی محقق نے ٹوئٹر پر اپنی چند پوسٹس سے یہ دعوی کیا تھا کہ حکومت پاکستان کی جانب سے بنائی گئی سرکاری ایپ "COVID-19 Gov PK" میں خرابی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ اس کے تحت صارفین کی خفیہ معلومات اور ڈیٹا چرایا جا رہا ہے اور یہ غیر محفوظ ہے۔

مزید :

کورونا وائرس -