کورونا وائرس، وہ واحدیورپی ملک جس نے مکمل لاک ڈاﺅن سے گریز کیا لیکن پھر نتیجہ کیا نکلا؟حکومت پاکستان بھی سوچ میں پڑجائے گی

کورونا وائرس، وہ واحدیورپی ملک جس نے مکمل لاک ڈاﺅن سے گریز کیا لیکن پھر ...
کورونا وائرس، وہ واحدیورپی ملک جس نے مکمل لاک ڈاﺅن سے گریز کیا لیکن پھر نتیجہ کیا نکلا؟حکومت پاکستان بھی سوچ میں پڑجائے گی

  

سٹاک ہوم(مانیٹرنگ ڈیسک) یورپی ملک سویڈن میں کورونا وائرس پلان ناکام ہونے پر اپوزیشن رہنماﺅں نے چیف ایپڈیمیالوجسٹ اینڈرس ٹیگ نیل سے استعفے کا مطالبہ کر دیا۔ میل آن لائن کے مطابق سویڈن واحد یورپی ملک تھا جس نے کورونا وائرس سے نمٹنے کے لیے مکمل لاک ڈاﺅن کرنے سے گریز کیا، جس کا نتیجہ یہ نکلا کہ وہاں کورونا وائرس کے کیسز کی تعداد 45ہزار 133سے تجاوز کر چکی ہے اور 4ہزار 694سے زائد لوگ لقمہ اجل بن چکے ہیں۔ یہ تعداد سویڈن کے ہمسایہ ممالک سے کہیں زیادہ ہے۔

اپوزیشن لیڈر جیمی اکیسن نے کہا ہے کہ ”ملک کے چیف ایپڈیمیالوجسٹ اینڈرس ٹیگ نیل کو کورونا وائرس پلان کی ناکامی کی ذمہ داری قبول کرنی چاہیے اور عہدے سے مستعفی ہو جانا چاہیے۔ “اپوزیشن کے دیگر رہنماﺅں نے بھی جیمی اکیسن کے موقف کی تائید کرتے ہوئے کہا کہ ”اینڈرس ٹیگ نیل کی کورونا وائرس کے خلاف حکمت عملی بری طرح ناکام ہو گئی ہے، ان کی حکمت عملی کا نتیجہ ہزاروں اموات کی صورت میں سامنے آیا ہے۔ اس کے بعد ان کے عہدے پر رہنے کا کوئی جواز نہیں بنتا۔“

واضح رہے کہ گزشتہ دنوں خود اینڈرس ٹیگ نیل بھی سخت لاک ڈاﺅن نہ کرنے کی غلطی کا اعتراف کر چکے ہیں۔ ایک انٹرویو میں انہوں نے کہا تھا کہ ”کورونا وائرس کے متعلق ہماری سوچ غلط تھی اور مکمل لاک ڈاﺅن نہ کرکے ہم نے بہت بڑی غلطی کی۔ آج ہم کورونا وائرس کے بارے میں جو کچھ جانتے ہیں، یہ ہمیں پہلے معلوم ہوتا تو ہم ہر حال میں مکمل لاک ڈاﺅن کر دیتے۔“

مزید :

بین الاقوامی -کورونا وائرس -