وفاق کے پاس اختیارات ہوتے تو سندھ کے ڈاکٹروں کو ۔۔۔۔حلیم عادل شیخ نے نیا پنڈورا باکس کھول دیا

وفاق کے پاس اختیارات ہوتے تو سندھ کے ڈاکٹروں کو ۔۔۔۔حلیم عادل شیخ نے نیا ...
وفاق کے پاس اختیارات ہوتے تو سندھ کے ڈاکٹروں کو ۔۔۔۔حلیم عادل شیخ نے نیا پنڈورا باکس کھول دیا

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان تحریک انصاف کےمرکزی نائب صدراو رسندھ اسمبلی میں پارلیمانی لیڈرحلیم عادل شیخ نے کہاہےکہ سندھ حکومت فوری طور پر گرینڈ ھیلتھ الائنس کے مطالبات منظور کرے،بڑے بڑے ہسپتالوں کو اربوں کے بجٹ دیئے جا چکے ہیں لیکن ہیلتھ سٹاف کو کوئی سہولیات میسر نہیں،18ویں ترمیم کے بعد ہیلتھ کا محکمہ سندھ حکومت کے پاس ہے،دیگر صوبوں میں رسک الاؤنس سمیت دیگر سہولیات ڈاکٹروں کو دی جا چکی ہیں لیکن سندھ میں ڈاکٹر سراپا احتجاج ہیں،وفاق کے پاس اختیارات ہوتے تو سندھ کے ڈاکٹروں کو احتجاج کرنے کی ضرورت نہیں پڑتی۔

تفصیلات کے مطابق  حلیم عادل شیخ نے اپنے ویڈیو بیان میں کہا ہے کہ سندھ میں فرنٹ لائن سولجر ڈاکٹروں کو نہ حفاظتی سوٹ دیئے گئے ہیں نہ ماسک دیئے گئے ہیں،وفاق کی جانب سے ملنے والا سامان بھی ڈاکٹروں کو نہیں پہنچایا گیا، پی ٹی آئی گرینڈ ہیلتھ الائنس کے احتجاج میں شامل ہوگی،سندھ ہیلتھ الائنس کے مطالبات رسک الاؤنس ٹائم سکیل سروس کور سمیت دیگر تمام مطالبات منظور کئے جائیں۔ حلیم عادل شیخ نے ڈاکٹروں سے اپیل کرتے ہوئے کہابرائے مہربانی اس ایمرجنسی حالات میں او پی ڈی کا بائیکاٹ نہ کیا جائے، غریب مریض سندھ میں پریشان ہیں او پی ڈی بند نہ کی جائے،سندھ حکومت نے مطالبات منظور نہ کئے تو پی ٹی آئی بھی احتجاج میں بھرپور شریک ہوگی،سندھ حکومت کی غفلت کی سزا غریب عوام کو نہ دی جائے۔ انہوں نے مزید کہا سندھ حکومت کے پاس وینٹیلیٹرز چلانے کے لئے ٹیکنیشن نہیں ہیں اور باتیں سٹیل مل چلانے کی کرتے ہیں، سندھ کی 111 ہیلتھ کی سہولیات این جی اوز اور نجی ہسپتالوں کو دی ہوئی ہیں بجٹ میں کرپشن کی جارہی ہے۔ انہوں نے مزید کہا پیپلز پارٹی اور ن لیگ کی حکومت میں سٹیل ملز 10 ارب روپے منافع سے 460 ارب خسارے میں آئی ہے،2008 سے 2013 تک 200 ارب اور 2013 سے 2018 تک 260 ارب کا خسارہ ہوا، کپتان کی سربراہی میں سٹیل ملز بھی چلے گی اور غریب کے گھر کا چولہا بھی جلے گا۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -