سوشل سیکیورٹی ہسپتالوں کو پرانی پوزیشن پر بحال کرنے کا فیصلہ

  سوشل سیکیورٹی ہسپتالوں کو پرانی پوزیشن پر بحال کرنے کا فیصلہ

  

لاہور(خبرنگار)صوبائی وزیر لیبر عنصر مجید خان کی زیر صدارت پنجاب ایمپلائز سوشل سکیورٹی انسٹی ٹیوشن (پیسی) میں اصلاحات کے حوالے سے اہم اجلاس  میں ایڈیشنل سیکرٹری لیبر حامد محمود ملہی، کمشنر سوشل سکیورٹی عنبرین ساجد، وائس کمشنر چوہدری محمد ارشد، ڈائریکٹر ایڈمن شمائلہ منظور, میڈیکل ایڈ و ائز ر ناصر جمال،ممبر گورننگ باڈی عبدالسمیع سمیت دیگر افراد نے شرکت کی۔ پیسی میں ریشنلائزیشن کے حوالے سے ملازمین کے تحفظات دور کرنے کیلئے مختلف تجاویز پر غور کیا گیا۔ ڈائریکٹر ایڈمن پیسی شمائلہ منظور نے ریشنلائزیشن کے حوالے سے شرکاء کو بریفنگ دی۔ سٹاف کی تعیناتی کے حوالے سے مقررہ طریقہ کار میں ضروری تبدیلی کی منظوری دی گئی۔ سوشل سکیورٹی ہسپتال ساہیوال کو اپ گریڈ جبکہ قصور اور جھنگ میں واقع سوشل سکیورٹی ہسپتالوں کو پرانی پوزیشن پر بحال کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ 

سوشل سکیورٹی ہسپتال فیصل آباد میں مزید سٹاف فراہم کرنے کی منظوری دی گئی۔ صوبائی وزیر نے سوشل سکیورٹی اسپتالوں میں ضرورت کے مطابق ڈاکٹروں اور پیرامیڈیکل سٹاف فراہم کرنے کی ہدایت کی۔ اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے صوبائی وزیر لیبر نے کہا کہ ہارڈشپ کیسز میں ملازمین کو ٹرانسفر، پوسٹنگ کے حوالے سے سہولت دی جائے گی۔اجلاس میں پیسی میں 45 سیٹیں بڑھانے کا فیصلہ کیا گیا جس کی منظوری گورننگ باڈی سے لی جائے گی اور جہاں ضروری ہوگا نئی سیٹوں کی منظوری دی جائے گی۔انہوں نے کہا کہ سوشل سکیورٹی ڈسپنسریز میں کم از کم 2 ڈاکٹرز اور کم از کم ایک لیڈی ڈاکٹر کی موجودگی یقینی بنائی جائے گی۔ ہسپتالوں سمیت میڈیکل آؤٹ لٹس میں رجسٹرڈ ورکرز کے مطابق میڈیکل کا عملہ فراہم کیا جائے گا۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -