کلبھوشن یادیو پر عالمی عدالت انصاف کا فیصلہ موثر بنانے کا بل قومی اسمبلی سے منظور

کلبھوشن یادیو پر عالمی عدالت انصاف کا فیصلہ موثر بنانے کا بل قومی اسمبلی سے ...
کلبھوشن یادیو پر عالمی عدالت انصاف کا فیصلہ موثر بنانے کا بل قومی اسمبلی سے منظور

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) قومی اسمبلی میں کلبھوشن یادیو پر عالمی عدالت انصاف کے فیصلے کو موثر بنانے کا بل آرڈیننس منظور کرلیا گیا۔

حکومت کی جانب سے قومی اسمبلی میں پیش کیا گیا عالمی عدالت انصاف نظر ثانی بل 2020  کثرتِ رائے سے منظور کرلیا گیا۔ اس بل کی منظوری کے بعد تمام بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو سمیت تمام غیر ملکیوں کو فوجی عدالتوں کی سزا کے خلاف ہائی کورٹ میں اپیل کا حق مل جائے گا۔ اسی قانون کے تحت فوجی عدالت سے سزا پانے والے بھارتی جاسوس کلبوشن یادیو اسلام آباد ہائی کورٹ میں اپیل کرسکے گا۔

بل کی منظوری پر قومی اسمبلی میں اپوزیشن کی جانب سے شدید احتجاج کیا گیا اور حکومت مخالف نعرے لگائے گئے۔ وزیر قانون فروغ نسیم نے بل کی وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ اگر یہ بل نہ لایا جاتا تو بھارت ہمارے خلاف اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں چلا جاتا۔

انہوں نے کہا کہ عالمی عدالت انصاف نے اپنے فیصلے کے پیرا نمبر 146 میں کہا ہے کہ کلبھوشن کو پھانسی دینے کے فیصلے پر نظر ثانی کرنا پڑے گی۔ اگر یہ قانون منظور نہ کیا جاتا تو پاکستان کے خلاف عالمی عدالتِ انصاف میں توہینِ عدالت کی کارروائی ہوسکتی تھی۔

مزید :

قومی -