ایران سے کیوی کی درآمد پر لگی پابندی ختم، بھارت کا زراعت میں تعاون کو فروغ دینے پر اتفاق

ایران سے کیوی کی درآمد پر لگی پابندی ختم، بھارت کا زراعت میں تعاون کو فروغ ...
ایران سے کیوی کی درآمد پر لگی پابندی ختم، بھارت کا زراعت میں تعاون کو فروغ دینے پر اتفاق
سورس: File Photo

  

 نئی دہلی (آئی ا ین پی ) ایران اور بھارت نے زرعی شعبے میں دوطرفہ تعاون کی راہ میں حائل رکاوٹوں کا جائزہ لینے کے بعد اس شعبے میں تعاون کی توسیع کے مقصد سے ایک مشترکہ ورکنگ گروپ بنانے پر اتفاق کیا ہے، بھارتی نائب وزیر زراعت  نے بتایا کہ ایران سے کیوی کی درآمدات پر لگی وقتی پابندی بھی ختم کر دی گئی ہے۔

 ایرانی میڈیا کے مطابق بھارت کا شمار ایران کے پہلے پانچ تجارتی شریکوں میں ہوتا ہے اور ایران اس سے چاول، چائے اور بہت سے مصالحے درآمد کرتا ہے جبکہ اسکے مقابلے میں بھار ت ایرانی خرما، سیب، زعفران، خشک میوجات بالخصوص پستے کا ایک بڑا خریدار شمار ہوتا ہے۔ ایران کے نائب وزیر زراعت برومندی ان دنوں بھارت کے دورے پر ہیں انہوں نے بھارت کے نائب وزیر زراعت منوج اہوجا سے ملاقات کی جس کے دوران زراعت کے شعبے میں دو طرفہ تعاون کی راہ میں حائل رکاوٹوں اور آپسی تعاون کو بہتر بنانے کی ممکنہ راہوں کا جائزہ کیا گیا۔ اس ملاقات میں ایران کے نائب وزیر زراعت نے زراعت کے شعبے میں اپنے ملک کی پیشرفت و ترقی سے آگاہ کرتے ہوئے پھلوں، جڑی بوٹیوں، فصل کو درپیش خطروں اور آفتوں سے مقابلے اور زرعی ٹیکنالوجیز کے شعبوں میں تعاون کے علاوہ اس شعبے کے ماہرین کے تبادے پر بھی زور دیا۔

اس موقع پر بھارت کے نائب وزیر زراعت منوج اہوجا نے بھی ایران کے ساتھ اپنے ملک کے ثقافتی اور جغرافیائی اشتراکات کا ذکر کرتے ہوئے زرعی شعبے میں ایران کے ساتھ باہمی تعاون کے فروغ کے لئے نئی دہلی کی آمادگی ظاہر کی۔ ساتھ ہی انہوں نے مختلف شعبوں میں مشترکہ تعاون کو لے کر ایران کی تجاویز کا خیرمقدم کیا۔ انہوں نے بتایا کہ ایران سے کیوی کی درآمدات پر لگی وقتی پابندی بھی ختم کر دی گئی ہے۔