پنجاب اسمبلی کے باہر دھرنے کی رپورٹ وزیر اعلٰی کو ارسال

پنجاب اسمبلی کے باہر دھرنے کی رپورٹ وزیر اعلٰی کو ارسال

 لاہور(جاوید اقبال)جوڑے پل سے ملحقہ کالونیوں کے ہزاروں شہریوں کے پنجاب اسمبلی کے باہر احتجاجی دھرنے کے بارے میں سپیشل برانچ نے رپورٹ وزیر اعلٰی کو ارسال کر دی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ حکومتی پارٹی سے تعلق رکھنے والے رکن قومی اسمبلی سہیل شوکت بٹ دھرنے کے ماسٹر مائنڈ تھے جو 38کروڑ روپے کے ترقیاتی فنڈز کے لیے اپنے حلقے کے شہریوں کو احتجاج کے لیے پنجاب اسمبلی کے سامنے لائے اور پلاننگ کے تحت انہوں نے اپنے خلاف نعرے لگوائے تاکہ تاثر یہ ملے کہ مظاہرین ان کے بھی خلاف تھے۔ذرائع نے بتایا ہے کہ سپیشل برانچ اور ٹاؤنوں کی انتظامیہ ضلعی انتظامیہ کے ذریعے وزیر اعلٰی کو رپورٹ پیش کی ہے جس میں انکشاف کیا گیا ہے کہ الطاف کالونی سمیت دیگرکالونیوں کے رہائشی لوگوں کا بڑا احتجاج حلقہ این اے 100کے ایم این سے سہیل شوکت بٹ کی مشاورت سے ہوا جنہوں نے بیک پر رہ کر لوگوں کوسامنے کیا جس کا مقصد وزیر اعلٰی پر دباؤ ڈالوا کر ترقیاتی فنڈز حاصل کرنا تھا ۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ مقامی لوگوں کی طرف سے مذکورہایم این اے پر مسائل حل کرنے کیلیے مسلسل دباؤ ڈالا جا رہا ہیجس پر انہیں فنڈز نہ ملے تو انہوں نے مقامی لوگوں کو احتجاج کرنے کے لیے فری ہینڈ دیا اور انہیں ہدایت کی کہ وہ حکومت کے ساتھ ان کے خلاف بھی نعرے بازی کریں جس پر عمل کیا گیا۔رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ اگر مذکورہ ایم این اے کی مچاورت مظاہرین کے ساتھ نہ ہوتی تو وہ ون کی آمد پر ان پر حملہ کرنے یا ان کو ذرکوب کرتے لیکن ایسا نہیں ہوا جس سے صاف ظاہر ہوتا ہیکہ حکومت کے خلاف مظاہرہ ان کی مشاورت سے ہوا اور ایسا کر کے رکن قومی اسمبلی نے حکومت کی بدنامی کروائی ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...