رضا ربانی چیئرمین سینیٹ کے لئے اپوزیشن کے امیدوار

رضا ربانی چیئرمین سینیٹ کے لئے اپوزیشن کے امیدوار

 اسلام آباد(خصوصی رپورٹ) حزب اختلاف نے پیپلزپارٹی کے رہنما رضا ربانی کو چیئرمین سینیٹ نامزد کردیا ہے۔زرداری ہاؤس اسلام آباد میں اپوزیشن جماعتوں کے اجلاس میں کیا گیا جس میں سابق صدر آصف علی زرداری، مولانا فضل الرحمان، چودھری شجاعت حسین، ڈاکٹر فاروق ستار، اسفند یارولی اور دیگر سیاسی رہنماؤں نے شرکت کی ۔اجلاس کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے عوامی نیشنل پارٹی کے سربراہ اسفند یار ولی نے کہا کہ اپوزیشن جماعتوں نے اتفاق رائے سے چیئرمین سینیٹ کے طورپررضا ربانی کو نامزد کیا ہے اور ڈپٹی چیئرمین شپ کا عہدہ بلوچستان کے لیے چھوڑا گیا ہے جس کا فیصلہ بلوچستان کے دوست خود کریں گے جب کہ مولانا فضل الرحمان پارٹی مشاورت کے بعد کل اپنا لائحہ عمل بتائیں گے۔ ایم کیوایم کے رہنما ڈاکٹر ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا کہ رضا ربانی کی نامزدگی اتفاق رائے سے کی گئی ہے اورآئندہ ہر قانون سازی میں یہ اتحاد قائم رکھنا ہوگا۔مقامی حکومت کے نظام کے قیام پراتفاق ہوگیاہے،اختیارات کی نچلی سطح تک تقسیم ضروری ہے، دیہی سندھ میں پیپلزپارٹی اورشہری سندھ میں متحدہ بڑی جماعتیں ہیں۔اس موقع پر رضا ربانی نے کہا کہ ایوانِ بالا کی چیئرمین شپ کے لیے اعتماد پر وہ پارٹی کے شریک چیرمین آصف زرداری سمیت تمام اپوزیشن جماعتوں کے شکر گزار ہیں، وہ کوشش کریں گے کہ سب کے اعتماد پر پورا اتریں۔مسلم لیگ (ق)کے رہنماکامل علی آغاکا کہنا تھا کہ اتفاق رائے سے فیصلہ کیاگیاکہ رضاربانی ہمارے مشترکہ امیدوارہونگے، بلوچستان چھوٹابھائی ہے،ڈپٹی چیرمین کافیصلہ بھی مشترکہ ہوگا۔واضح رہے کہ مولانافضل الرحمان آصف زرداری سے ملاقات کے بعدواپس چلے گئے۔

مزید : صفحہ اول


loading...