لاہور ہائی کورٹ نے نیول وار کالج پر خودکش حملے کے سہولت کار کی اپیل خارج کردی،سزائیں برقرار

لاہور ہائی کورٹ نے نیول وار کالج پر خودکش حملے کے سہولت کار کی اپیل خارج ...
لاہور ہائی کورٹ نے نیول وار کالج پر خودکش حملے کے سہولت کار کی اپیل خارج کردی،سزائیں برقرار

  


لاہور (نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائی کورٹ کے ڈویژن بنچ نے نیول وار کالج پر خودکش حملے کے سہولت کار ندیم عباس کی اپیل خارج کرتے ہوئے اسے انسداد دہشت گردی کی عدالت سے ملنے والی سزا برقرار رکھی ۔انسداد دہشت گردی کی عدالت نے28فروری2009کو مجرم ندیم عباس کو 3 بار عمر قید اور سوا چھ لاکھ روپے جرمانے کی سزا سنائی تھی جسے ہائی کورٹ نے برقرار رکھا ۔یکم جنوری 2008 کو مال روڈ لاہور پر واقع نیول وار کالج پر خودکش حملہ کیا گیاجس کے نتیجے میں3 اہلکار شہید اور 15 افراد زخمی ہوئے تھے ۔تحقیقاتی اداروں نے کچھ ہی عرصہ میں خود کش حملہ آور کوبارودی مواد،موٹر سائیکل فراہم کرنے والے ملزم ندیم عباس کو لاہور سے گرفتار کر لیاجس کا چالان انسداد دہشت گردی کی عدالت میں بھیجا گیا اور اسے تعزیرات پاکستان اور انسداد دہشت گردی ایکٹ کے تحت تین بار عمرقیداورسوا چھ لاکھ روپے جرمانے کی سزائیں سنائی گئی تھیںجس کے خلاف ندیم عباس نے لاہور ہائی کورٹ میں اپیل دائر کی جسے خارج کردیا گیا ہے ۔

مزید : لاہور


loading...