ڈونلڈ ٹرمپ نے سعودی عرب کی سب سے بڑی خواہش پوری کردی، اب امریکہ ایسا کام کرے گا کہ جان کر سعودی نائب ولی عہد کی خوشی کی انتہا نہ رہے گی

ڈونلڈ ٹرمپ نے سعودی عرب کی سب سے بڑی خواہش پوری کردی، اب امریکہ ایسا کام کرے ...
ڈونلڈ ٹرمپ نے سعودی عرب کی سب سے بڑی خواہش پوری کردی، اب امریکہ ایسا کام کرے گا کہ جان کر سعودی نائب ولی عہد کی خوشی کی انتہا نہ رہے گی

  

واشنگٹن(مانیٹرنگ مانیٹرنگ ڈیسک) یمن کی جنگ میں عام شہریوں کی ہلاکتوں کے الزامات عائد ہونے پر امریکہ نے سعودی عرب کو ہتھیاروں کی فروخت بند کر دی تھی۔ ایک ماہ قبل واشنگٹن پوسٹ نے رپورٹ دی تھی کہ وائٹ ہاﺅس سعودی عرب کو 30کروڑ ڈالر(تقریباً 30ارب روپے) مالیت کی میزائل ٹیکنالوجی اور بحرین کو 4ارب ڈالر(تقریباً4کھرب روپے) مالیت کے ایف 16طیارے فروخت کرنے کا فیصلہ کر چکا ہے۔ واشنگٹن پوسٹ کی نئی رپورٹ کے مطابق ٹرمپ انتظامیہ نے سعودی عرب پر عائد پابندی اٹھاتے ہوئے اسے اسلحہ فروخت کرنے اور میزائل ٹیکنالوجی دینے کی منظوری دے دی ہے۔

’صدام حسین کو پکڑا تو اس نے ایسی بات کہہ دی کہ امریکی خفیہ ایجنسی کے تمام ایجنٹ شرم سے پانی پانی ہوگئے‘ امریکی قید میں عراق کے سابق صدر سے تفتیش کرنے والے سی آئی اے ایجنٹ نے 10 سا ل بعد تہلکہ خیز تفصیلات بیان کردیں

رپورٹ کے مطابق سابق امریکی صدر باراک اوباما نے اپنے اقتدار کے آخری مہینوں میں سعودی عرب کو ہتھیاروں کی فروخت پر پابندی عائد کی تھی جس کی وجہ یمن میں سعودی اتحاد کی بمباری سے مبینہ طور پر عام شہریوں کی ہلاکتوں پر آنے والا عالمی ردعمل تھا۔ امریکہ نے سعودی عرب کو اسلحے کی فراہمی تو روک دی تھی تاہم امریکی افواج نے یمن کی جنگ میں سعودی اتحاد کی لاجسٹک اینڈ سرویلنس سپورٹ جاری رکھی تھی۔ یمنی مانیٹرنگ گروپ کی حالیہ رپورٹ میں دعوٰی کیا گیا ہے کہ مارچ 2015ءسے اب تک یمن جنگ میں 11ہزار 400عام شہری ہلاک ہو چکے ہیں۔

واشنگٹن پوسٹ کے مطابق سعودی عرب کو اسلحے کی دوبارہ فراہمی کی منظور ی امریکی وزیرخارجہ ریکس ٹیلرسن نے دی ہے۔ حکومتی عہدیداروں کا کہنا ہے کہ سعودی عرب کو اسلحے کی فراہمی کی بحالی خطے میں امریکی اثر بحال کرنے کے لیے ضروری تھی۔ اس اقدام کے ذریعے نئی امریکی انتظامیہ کی طرف سے سعودی عرب کے ساتھ مزید دوستانہ تعلق استوار کرنے اور ایران کے متعلق مزید سخت موقف اپنانے کا عندیہ دیا گیا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -