جب بھی جنگیں ہوئیں یہ اپنے پیچھے تباہی اور بربادی کی داستانیں چھوڑ کر گئی ہیں :اسفندیار ولی خان

جب بھی جنگیں ہوئیں یہ اپنے پیچھے تباہی اور بربادی کی داستانیں چھوڑ کر گئی ہیں ...
جب بھی جنگیں ہوئیں یہ اپنے پیچھے تباہی اور بربادی کی داستانیں چھوڑ کر گئی ہیں :اسفندیار ولی خان

  


چارسدہ (ڈیلی پاکستان آن لائن)عوامی نیشنل پارٹی کے سربراہ سفندیار ولی خان نے کہا ہے کہ جنگ کسی بھی مسئلے کا حل نہیں ، جنگیں جب بھی ہوئیں یہ اپنے پیچھے تباہی اور بربادی کی داستانیں چھوڑ کر گئی ہیں اس لئے ضروری ہے کہ جنگ کی بجائے امن اور ترقی کے لئے کوششیں کی جائیں ، افغانستان میں امن عمل خوش آئند لیکن اس میں افغان حکومت سمیت  تمام سٹیک ہولڈرز کو حصہ بنایا جاے  پرامن افغانستان پورے خطے کی ضرورت ہے ، وفاقی حکومت بچگانہ حرکتیں ترک کردے ،غریب عوام پر ٹیکسوں کا اتنا بوجھ لا ددیا گیاہے کہ عوام کے لئے سفید پوشی کا بھرم قائم رکھنا مشکل ہوگیا ہے ۔

 ولی باغ چار سدہ میں عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر پارلیمانی لیڈراصغرخان اچکزئی سے ملاقات کے موقع پر  گفتگو کرتے ہوئے اسفند یار ولی خان کا کہنا تھا کہ عوامی نیشنل پارٹی نے ہمیشہ عوام کے حقوق کی بات کی ہے اور ہمیشہ کرتی رہے گی ،ہمیں حکومت ، مراعات اور کرسی کی کوئی فکر نہیں مگر عوام کی مشکلات پر چپ نہیں سادھ سکتے۔ انہوں نے کہا کہ وفاقی حکومت کا طرز حکمرانی بچگانہ ہے ،عوام پر مسلسل ٹیکس لگائے جارہے ہیں ، گیس ، بجلی سمیت اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں مسلسل اضافہ ہوتا جارہا ہے جبکہ حکومتی اراکین سب کچھ ٹھیک کا راگ الاپ رہے ہیں جو تشویشناک ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہمارا پورا خطہ امن ،ترقی اور خوشحالی چاہتا ہے، خطے کے تمام ممالک کا فرض بنتا ہے کہ وہ اچھے ہمسایوں کی حیثیت سے رہیں جنگ کسی بھی مسئلے کا حل نہیں جنگیں جب بھی ہوئیں یہ اپنے ساتھ خونریزی لائیں اور اپنے پیچھے تباہی اور بربادی کی داستانیں چھوڑ کر گئیں، اس لئے ضروری ہے کہ جنگ کی بجائے امن اور افراتفری کی بجائے ترقی کے لئے کام کیا جائے ۔ 

مزید : علاقائی /خیبرپختون خواہ /چارسدہ


loading...