رواں مالی سال کے دوران ملک میں غیر ملکی سرمایہ کاری میں 65.7فیصد اضافہ

رواں مالی سال کے دوران ملک میں غیر ملکی سرمایہ کاری میں 65.7فیصد اضافہ

  



ملتان (نیوز رپورٹر) رواں مالی سال کے دوران ملک میں کی جانے والی براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری (ایف ڈی آئی) میں 65.7 فیصد اضافہ ہوا ہے۔ سال 2019ء (بقیہ نمبر50صفحہ12پر)

کے دوران پاکستان کے جاری کھاتوں کے خسارہ میں 62 فیصد کی نمایاں کمی ہوئی ہے۔ سٹیٹ بینک آف پاکستان (پی بی ایس) کے اعداد و شمار کے مطابق جاری مالی سال کے پہلے سات ماہ میں کے دوران پاکستان میں کی جانے والی براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری کے حجم میں 620 ملین ڈالر کا اضافہ ہوا ہے اور اس دوران ایف ڈی آئی کا حجم 1.56 ارب ڈالر تک بڑھ گیا۔ اسی طرح گذشتہ مالی سال کے جولائی تا جنوری 2018 19ء کے مقابلے میں رواں مالی سال کے اسی عرصہ کے دوران ایف ڈی آئی میں 7۔ 65 فیصد کا نمایاں اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے سٹیٹ بینک آف پاکستان کے مطابق 2019ء کے دوران پاکستان کے جاری کردہ کھاتوں کے خسارہ میں 62 فیصد کی نمایاں کمی واقع ہوئی ہے اور 2019ء کے اختتام پر جاری کھاتوں کا خسارہ 4۔7 ارب ڈالر کی سطح تک کم ہو گیا جبکہ 2018ء کے لیئے جاری کھاتوں کا خسارہ 5۔ 19 ارب ڈالر رہا تھا۔ اسی طرح 2018ء کے مقابلے میں 2019ء کے دوران پاکستان کے جاری کھاتوں کے خسارے میں 1۔ 12 ارب ڈالر کی نمایاں کمی ریکارڈ کی گئی۔

اضافہ

مزید : ملتان صفحہ آخر