طلبہ کی دوسرے کالجز میں منتقلی روکنے کے حکم امتناعی میں توسیع

طلبہ کی دوسرے کالجز میں منتقلی روکنے کے حکم امتناعی میں توسیع

  



لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائیکورٹ کی جسٹس عائشہ اے ملک نے نجی میڈیکل کالجوں میں ری ایڈمیشن پالیسی کے خلاف کیس میں طالب علموں کودوسرے کالجوں میں بھیجنے سے روکنے کے اپنے حکم امتناعی میں توسیع کردی۔دوران سماعت فاضل جج نے ریمارکس دیئے کہ طلبہ کی ترجیحات کو مدنظرنہ رکھنے،ناقص پالیسی اور انتظامات سے خرابی پیدا ہوئی،الزامات کی بجائے معاملہ حل کیوں نہیں کیا گیا، درخواست گزارطالب علموں کی طرف سے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ طلبانے نجی میڈیکل کالجوں میں میرٹ پر داخلہ لیا،میرٹ پرپورا اترنے کے باوجود یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز نے ری ایڈمیشن پالیسی نافذ کردی جس سے طالب علم مشکلات کاشکار ہیں۔ عدالت نے نجی میڈیکل کالجوں کی میرٹ لسٹیں،خالی نشستوں کی تفصیلات اورنئے داخل ہونے والے طالب علموں کے نام طلب کرتے ہوئے سماعت آئندہ تاریخ پیشی تک ملتوی کردی۔

کالجز منتقلی

مزید : پشاورصفحہ آخر