ضلع صوابی کی سیاست میں ڈرامائی تبدیلی آنے کی توقع

    ضلع صوابی کی سیاست میں ڈرامائی تبدیلی آنے کی توقع

  



ٹوپی(نمائندہ خصوصی) ضلع صوابی کی سیاست میں ڈرامائی تبدیلی آنے کی توقع پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی قائد شہرام خان ترکئی سے وزرات واپس لینے کے بعد ان کی سیاسی کردار کو محدود کرنے کیلئے متبادل قیادت لانے کے لئے ایڑی چوٹی کا زور پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی حکومتی عہدیدار(پرویز ختک) ضلع صوابی کے معروف باچاگان خاندان کو تحریک انصاف میں شامل کرنے کے لے در پردہ کوشیش اور ملاقاتوں شروع کی ہیں اور خفیہ ملاقاتوں کا سلسلہ جاری ہے اعجازاکرم باچا،شیرازباچا سے رابطے اور ملاقاتوں پر ضلع بھر کے سیاسی حلقون میں چہ مگوئیاں جاری ہیں یاد رھے کہ باچاگان فیملی اپنی خوداری. ایمانداری اورسخاوت کی وجہ سے مشہورھے اور ضلع بھر میں ان کو منفرد مقام حاصل ا ور خاطر خوا ذاتی ووٹ بینک کے مالک ہیں اورخاندانی طور پر پاکستان مسلم لیگ ن سے وابسطہ ھے دوسری طرف ترکئی خاندان شہرام ترکئی،لیاقت ترکئی،بلنداقبال ترکئی محمد علی ترکئی فیملی کا بھی ضلع صوابی اورخصوصا تحصیل رزڑ میں کافی مضبوط ووٹ بینک موجود اور انفرادی طور پر عوامی جمھوری اتحاد کے پیلٹ فارم سے ایک قومی تین صوبائی نشتیں اور ضلع نطامت جیت چکے ہیں سیاسی ناقدین اورتخزیہ نگاروں کا خیال ھے کہ کیا حکومت باچاگان فیملی کو منانے میں کامیاب ہوجائیگی یانہیں فی الحال باچاگان اپنے باپ دادا کی پارٹی مسلم لیگ ن کو چھوڑنے پر ہزار بار سوچیں گے تحریک انصاف میں جانے کے چانس انتہائی کم ھے دوسری طرف ترکئی فیملی کیا حکمت عملی اپنائیں گے وقت ہی بہتر بتائے گا اور ابتک ترکئی فیملی پاکستان تحریک انصاف اور مرکزی چیئرمین عمران خان پر مسلسل اعتماد کا اظہار کررہے ہیں تاہم باچاگان فیملی حکومتی وفد یاوزراء وسنیٹرزکیساتھ خفیہ ملاقاتوں سے انکارکررہے ہیں تاہم ان کا کہنا ھے کہ سابق وزیراعلی و وفاقی وزیر دفاع پرویز خٹک سے ان کے خاندان کے ساتھ پرانے تعلقات و مراسم ضرور ھے.دوسری طرف سابق سینئر صوبائی وزیرعاطف خان کے خلاف سپیکر اسد قیصر نسیم الرحمان کو پارٹی میں لانے کیلئے سرگرمی دکھا رہے ہیں اور ملاقاتوں کا ذکر زبان زد عام ہیں

مزید : پشاورصفحہ آخر