وزیر اعظم کا بجلی اور گیس کی قیمتیں مزید نہ بڑھانے کا اعلان

  وزیر اعظم کا بجلی اور گیس کی قیمتیں مزید نہ بڑھانے کا اعلان

  



مہمند،پشاور (نمائندہ پاکستان، مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) وزیراعظم نے کہا ہے کہ بجلی اور گیس کی قیمتیں نہیں بڑھیں گی، بلکہ قیمتیں مز ید کم کرنے کی کوشش کریں گے، عوام ا و ر انڈسٹری پر مزید بوجھ نہیں ڈال سکتے، ذخیرہ اندوزی کر کے پیسہ بنانے والوں کو نہیں چھوڑوں گا۔ گزشتہ روز مہمند میں جلسے عام سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم کا کہنا تھا کشمیر یو ں کو 7 ماہ سے بھارتی فوج نے گھروں میں بند کر رکھا ہے، پاکستانی قوم کشمیریوں کیساتھ کھڑی ہے، اللہ تعالیٰ نے مشکل وقت میں صبر کو بہترین صفت قرار دیا ہے، مودی کا نظریہ انسا نوں سے نفرت پر مبنی ہے، دعا ہے اللہ تعالیٰ کشمیریوں کو اس ظلم سے آزاد کرے، آر ایس ایس کے غنڈوں نے دلی میں مسلمانوں پر ظلم کیا، ساری دنیا نے دیکھا دلی میں پولیس سے ملکر مسلمانوں پر ظلم ہوا، مودی کا نظریہ سب اقلیتوں کیخلاف ہے۔عمران خان کا کہنا تھا پاکستان ایک عظیم نظریے کے تحت بنا تھا، چین دنیا میں سب سے تیزی سے اوپر جا رہا ہے، چین نے فیصلہ کیا غریب عوام پر پیسہ خرچ کرنا ہے، چینی حکومت نے غریب عوام کیلئے انڈسٹریاں لگائیں، پاکستان کے متعدد علاقے زیتون کی کاشت کیلئے بہترین ہیں، قبائلی علا قے میں صحت احساس پروگرام لا رہے ہیں۔ وزیراعظم نے کہا افغانستان میں امن کیلئے میرے دل سے دعا نکلتی ہے، ہماری کوشش ہے وہاں امن ہو، 40 سال سے افغانستان کے لوگوں پر عذاب آیا ہوا ہے، اللہ کرے افغان امن کامیاب ہو، کوشش کروں گا افغان بارڈر کھلے تا کہ تجارت شروع ہو۔اس موقع پر وزیراعظم نے علاقے میں تھری اور فور جی سروس لانے کی ذ مہ داری مراد سعید کو سونپتے ہوئے کہا قبائل علاقوں میں موبائل فون سے گھر بیٹھے بچوں کو تعلیم مل رہی ہے۔گزشتہ حکومت نے بجلی کی پیداوار کیلئے 40 سال کے معاہدے کر رکھے ہیں، حکومت میں آئے تو گردشی قرضے بڑھ چکے تھے،دیگر قرض بڑھتے جا رہے تھے، مجبوراً بجلی کی قیمتیں بڑھانا پڑیں، بنگلادیش اور بھارت میں بجلی سستی، یہاں مہنگی ہے، بجلی اور گیس کی قیمتیں نہیں بڑھیں گی، بلکہ قیمتیں مزید کم کرنے کی کوشش کریں گے، اپنے لوگوں پر مزید بوجھ نہیں ڈالنے دیں گے۔ انہوں نے کہا فکرنہ کریں مشکل وقت گزر گیا، وعدہ کرتا ہوں ذخیرہ اندوزی کرنے والوں کو نہیں چھوڑوں گا، رپورٹ آنیوالی ہے کسی کو نہیں چھوڑیں گے۔وزیراعظم کا کہنا تھا کبھی بھی کوئی ملک ترقی نہیں کرسکتا جس کے حکمران کرپٹ ہوں، وسائل کی کمی کی وجہ سے کوئی ملک غریب نہیں ہوتا، ملک تب غریب ہوتا ہے جب حکمران پیسہ چوری کر کے باہر لے جاتے ہیں، کرپٹ حکمران ملک کا پیسہ چوری کر کے لند ن، امریکہ میں بڑے گھر لے لیتے ہیں، جن کے اکاؤنٹ، کاروبار اور محل بیرون ملک ہیں انہیں کبھی ووٹ نہ دیں، میرے اوپرالزام لگایا گیاکہ میں لندن بھاگ گیا؟ 10 ماہ میں عدالت کو تمام دستاویزات دیں، جب چوری نہ کی ہو تو لندن بھاگنے کی ضرورت نہیں ہوتی، ملک اس لیے آگے نہ بڑھ سکا کیونکہ یہاں کرپٹ لوگ حکمران تھے۔بعدازاں سپورٹس کمپلیکس پشاور میں انڈر 21 گیمز کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا اگر کھلاڑی نہ ہوتا تو جو حکومت ملی ڈیرھ سال میں چھوڑ کر جا چکا ہوتا، زندگی اونچ نیچ کا نام ہے، گر کر کھڑا ہونیوالا پہلے سے زیادہ مضبوط ہوتا ہے، کھیلوں سے ہی مشکل حالات کا مقابلہ کرنا سیکھا۔حی تقریب سے خطاب میں ان کا مزید کہنا تھا زندگی مقابلے کا نام ہے، پڑھائی اور بزنس میں بھی مقابلہ ہوتا ہے، سیاست بھی مقابلے کا نام ہے، چیمپئن ہارنے سے ڈرتا نہیں، سیکھتا ہے، انسان تب ہارتا ہے جب شکست تسلیم کرلے، چیمپئن اپنی شکست پر غلطیوں کو درست کرتا ہے۔عمران خان کا کہنا تھا کھیلوں کے انعقاد پر وزیراعلیٰ محمود خان کو مبارکبادد یتا ہو ں، ان گیمز سے نوجوانوں کا ٹیلنٹ سامنے آئے گا، نوجوانوں کو سپورٹس کی اہمیت بتانا چاہتا ہوں، گاؤں کی سطح پر کھیلوں کو فروغ دینا ہوگا۔ قبل ازیں عمران خان نے انڈر 21 گیمز کا افتتاح کیا، اس موقع پر آتش بازی کا شاندار مظاہرہ کیا گیا جبکہ آسمان پر رنگ بکھر گئے، گورنر، وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا اور صوبائی وزرا بھی تقریب میں شریک ہوئے۔

عمران خان

مزید : صفحہ اول