گرینڈ ہیلتھ الائنس کا مظاہرہ،پولیس کا لاتھی چارج،2ڈاکٹرز زخمی،متعدد نرسیں بیہوش

  گرینڈ ہیلتھ الائنس کا مظاہرہ،پولیس کا لاتھی چارج،2ڈاکٹرز زخمی،متعدد نرسیں ...

  



لاہور(جنرل رپورٹر) محکمہ صحت کی طرف سے ایم ٹی آئی ایکٹ منظوری کیلئے پنجاب اسمبلی میں پیش کرنے کے خلاف گرینڈ ہیلتھ الائنس پنجاب کے سینکڑوں ڈاکٹرز،نرسوں اور پیرا میڈیکل سٹاف نے ہڑتال کر دی۔ تمام ہسپتالوں سے ڈاکٹرز مال روڈ پر اسمبلی ہال کے سامنے جمع ہو گئے اس دوران پولیس اور احتجاجی ڈاکٹروں اور نرسوں میں تصادم ہو گیا جس کے نتیجے میں 2 ڈاکٹر زخمی اور کئی نرسیں بے ہوش ہو گئیں۔ تفصیلات کے مطابق گرینڈ ہیلتھ الائنس کے رہنماؤں ڈاکٹر حامد بٹ،ڈاکٹر عاطف چودھری،ڈاکٹر سلمان حسیب،نصرت چیمہ،نصرت شیخ،تصدق حسین، ارشد بٹ اوریوسف بلاسمیت دیگر قائدین کی سربراہی میں نکالی گئی ریلیاں اسمبلی ہال کے باہر جمع ہو گئیں،جہاں ایم ٹی آئی ایکٹ کے خلاف نعرہ بازی کی اس دوران پولیس نے مظاہرین کومنتشر کرنے کیلئے لاٹھیاں فضاء میں لہرائیں تاہم دھکم پیل کے دوران سر پر ڈنڈے لگنے سے ڈاکٹر عرفان اور انور زخمی ہو گئے اس دوران کئی نرسیں بیچ بچاؤ کراتے ہوئے گر کربے ہوش ہو گئیں۔مال روڈ واقعہ کے خلاف گرینڈ ہیلتھ الائنس نے ہنگامی بنیادوں پر جنرل کونسل کا اجلاس طلب کیا جس میں آج منگل کے روزتمام ہسپتالوں میں ہڑتال اور بیرونی سٹرکیں بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔گرینڈ ہیلتھ الائنس رہنماؤں نے کہا کہ حکومت نے متنازعہ ایم ٹی آئی ایکٹ منظوری کے لیے پنجاب اسمبلی میں پیش کر کے عدالتی توہین کی ہے۔صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا کہ ہسپتالوں کی نجکاری نہیں ہو گی، ڈاکٹرز جان بوجھ کر ہڑتالیں کرکے اپنا اور مریضوں کا نقصان کر رہے ہیں۔

مظاہرہ/لاٹھی چارج

مزید : صفحہ اول