صنفی امتیاز ختم کرنے کیلئے نئے قوانین بنائے جائیں،مہنا ز رفیع

  صنفی امتیاز ختم کرنے کیلئے نئے قوانین بنائے جائیں،مہنا ز رفیع

  



لاہور(لیڈی رپورٹر)صنفی امتیاز اور ہرا سمنٹ و جہیز کے خا تمے کے لئے مذید نئے اور فعال قانو ن کی ضرورت ہے۔پہلے سے مو جو د قوا نین صرف قانو ن کی حد تک مو جو د ہیں عملی طو ر پر اقدا مات کی اشد ضرورت ہے۔ہمارے ملک میں خواتین کو صنفی امتیاز کا سا منا ہے عور ت اپنے حقوق کے لئے آواز اٹھا نے کا پورا حق رکھتی ہے۔کئی سال گزر نے کے با وجو د آج بھی صو با ئی دا رلحکو مت کی 80% خواتین کو اپنے حق کے لئے قا نون سا زی کا علم نہیں ہے ان خیالات کا اظہا ر مختلف طبقہ فکر سے تعلق رکھنے والی خواتین بیگم مہنا ز رفیع، صبا ممتا ز، نبیلہ یا سمین، مدیحہ را نا نے روزنا مہ ”پا کستان“ سے گفتگو کر تے ہو ئے کیا۔ انہو ں نے کہا کہ خواتین کو شروع سے ہی جنسی امتیاز کا سا منا کر نا پڑ رہا ہے۔

  انہو ں نے کہا کہ یہ الگ با ت ہے کہ شہروں اور دیہا تو ں میں اس کی ریشو میں فرق ہے لیکن آج بھی عورت کو صنفی امتیاز کا سامنا ہے۔انہو ں نے کہا کہ عورت کو اپنے حقوق کے لئے آواز اٹھا نے کا پورا پورا حق حا صل ہے ہا ں البتہ ہم کو ئی بھی کا م کر یں لیکن ہمارا ستہ ٹھیک ہو نا چا ہیے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1