ماسک ذخیرہ کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کا فیصلہ

ماسک ذخیرہ کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کا فیصلہ

  



لاہور(جنرل رپورٹر)چیف ڈرگز کنٹرولر پنجاب ڈاکٹر محمد منور حیات نے پنجاب بھر کے تمام ڈرگ انسپکٹرز اور ڈرگ کنٹرولرز کو ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر تمام فیلڈ افسران کے علاقہ میں ڈسٹربیوٹرز، میڈیکل سٹور یا فارمیسی مالکان کورونا وائرس سے بچاؤ کے لیے استعمال کی جانے والی حفاظتی اشیا اور فیس ماسک وغیرہ کی ذخیرہ اندوزی میں ملوث نظرآئیں یا زائد قیمت پر فروخت کرنے کی کوشش کریں تواس کی رپورٹ فوراََ متعلقہ تھانہ میں کروائی جائے۔حکومتِ پنجاب نے کرونا وائرس سے متعلق حفاظتی ماسک اور دوسری متعلقہ اشیا کی ذخیرہ اندوزی اور زائدقیمت وصول کرنے پر 2ماہ کے لیے دفعہ 144 (6) تعزیرات قانون 1898 نافذ کی ہے۔ لہذا اس طرح کے تمام کیسز کی اطلاع چیف ڈرگز کنٹرولر آفس میں دی جائے اور قانونی کارروائی کی جائے۔ اس نوعیت کے کیس میں زائد قیمت وصول کرنے پر محمود فارمیسی کے خلاف تھانہ ڈیفنس لاہور میں ایف آئی آرکروائی جاچکی ہے۔مزید برآں چیف ڈرگز کنٹرولرپنجاب کا کہنا تھا کہ تمام کیمسٹ حضرات اس قومی نوعیت کے مسئلہ میں حکومت ِپنجاب اور محکمہ پرائمری اینڈ سکینڈری ہیلتھ کئیر کے ساتھ تعاون کرتے ہوئے ذخیرہ اندوزی اور زائد قیمت وصول کرنے سے پرہیز کریں۔خلاف ورزی کرنے کی صورت میں سخت قانونی کاروائی کی جائے گی۔

مزید : میٹروپولیٹن 1