یورپی منڈی میں حریف ممالک کی مصنوعات سے مقابلہ کیا جائے، شاہد رشید

  یورپی منڈی میں حریف ممالک کی مصنوعات سے مقابلہ کیا جائے، شاہد رشید

  



اسلام آباد(کامرس ڈیسک) اسلام آباد چیمبر کے سابق صدر شاہد رشید بٹ نے کہا ہے کہ دگر گوں عالمی معاشی حالات میں یورپی یونین کے جانب سے پاکستان کے لئے جی ایس پی پلس کے تحت تجارتی مراعات میں دو سال کی توسیع انتہائی حوصلہ افزاء اور حکومت کی بڑی کامیابی ہے جس سے ملک میں معاشی استحکام آئے گا۔یہ توسیع پورپی یونین کی جانب سے پاکستان کی مختلف شعبوں میں اچھی کارکردگی کا اعتراف ہے۔ان شعبوں میں قوانین میں بہتری، اداروں کی آزادی، انسانی حقوق، مزدوروں کے حقوق، ماحولیات، انسداد منشیات اور کرپشن کے خلاف اقدامات شامل ہیں۔ شاہد رشید بٹ نے کہا کہ جی ایس پی پلس کی سہولت ملنے سے قبل پاکستان یورپ کو ساڑھے چار ارب یوروکی اشیاء برامد کرتا تھا جو سہولت ملنے کے بعد پینسٹھ فیصد اضافہ کے ساتھ ساڑھے سات ارب یورو تک جا پہنچیں جو امسال چین اور دیگر ممالک کی برامدات میں کمی کی وجہ سے نو ارب یورو سے تجاوز کر سکتی ہیں جس سے ملک کے بہت سے مسائل حل ہو جائیں گے۔ انھوں نے کہا کہ پاکستانی معیشت کو مستحکم کرنے کا سب سے بہتر زریعہ برامدات ہی ہیں جنھیں بہتر بنانے کے لئے مزید کوششوں کی ضرورت ہے۔انھوں نے کہا کہ یورپی یونین نے پاکستان میں تحریر و تقریراورمیڈیا پر پابندیوں اور کئی این جی اوز کے لائسنس منسوخ کرنے پر تشویش ظاہر کرتے ہوئے صورتحال میں بہتری کا مطالبہ کیا ہے۔

حکومت نے دو سال میں ان معاملات کو بہتر بنایا تو جی ایس پی پلس میں مزید توسیع ممکن ہو سکے گی ورنہ اس سہولت سے ہاتھ دھونا پڑیں گے اور پاکستان کو یورپی منڈی میں حریف ممالک کی مصنوعات سے مقابلہ کرنا ہو گا جس میں بھارت چین ویتنام اور ترکی شامل ہیں۔

مزید : کامرس