غیر قانونی اثاثہ جات کیس، فواد حسن فواد پر فرد جرم عائد نہ کی جاسکی

غیر قانونی اثاثہ جات کیس، فواد حسن فواد پر فرد جرم عائد نہ کی جاسکی

  



اسلام آباد(آئی این پی) غیر قانونی اثاثہ جات کیس میں سابق وزیراعظم نوازشریف کے پرنسپل سیکرٹری فواد حسن فواد پر فرد جرم عائد نہ کی جا سکی۔تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت کے جج محمد خلیل ناز نے فواد حسن فواد کیخلاف کیس کی سماعت کی،اس موقع پر فواد حسن فواد اپنی اہلیہ رباب حسن کے ہمراہ احتساب عدالت پیش ہوئے جبکہ دیگر شریک ملزمان وقار حسن اور بھابھی انجم حسن بھی پیش ہوئے۔دوران سما عت فواد حسن فواد سمیت دیگر شریک ملزمان پر بھی فرد جرم عائد نہ ہو سکی،نیب نے جانب سے موقف اختیار کیا گیا کہ فواد حسن فواد نے ایک ا ر ب نو کروڑ سے زائد مالیت کے غیر قانونی اثاثہ جات بنائے،اس کے علاوہ ملزم نے راولپنڈی میں پچاس کروڑ روپے مالیت کا پانچ کنال کا کمرشل پلاٹ بنایا جبکہ ملزم کے راولپنڈی کے ایک پندرہ منزلہ پلازے میں تین ارب پچاسی کروڑ روپے کے حصص سامنے آئے ہیں۔ جس پر عدالت نے کیس کی کارروائی مکمل ہونے پر مزید سماعت دو اپریل تک ملتوی کردی اور آئندہ سماعت پر تمام ملزمان کو دوبارہ پیش ہو نے کا حکم دیا۔

فواد حسن فواد

مزید : صفحہ اول