وزیر اعلیٰ پنجاب کے قابل تحسین اقدامات

وزیر اعلیٰ پنجاب کے قابل تحسین اقدامات
وزیر اعلیٰ پنجاب کے قابل تحسین اقدامات

  



گزشتہ دنوں وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار سے وزیراعلیٰ آفس میں اینکرپرسنز، کالم نگاروں اور سینئر صحافیوں نے ملاقات کی۔ ملاقات میں اینکرپرسنز، کالم نگاروں اور سینئر صحافیوں کو کورونا وائرس سے نمٹنے کیلئے حکومت پنجاب کی جانب سے کئے گئے اقدامات اور احتیاطی تدابیر سے آگاہ کیا گیا۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے بتایا کہ پنجاب حکومت نے کورونا وائرس سے نمٹنے کیلئے پیشگی احتیاطی اقدامات کئے ہیں۔ کورونا وائرس 80 سے زائد ممالک میں پھیل چکا ہے اوراب تک دنیا بھر میں 95 ہزار لوگ کورونا وائرس سے متاثر ہوئے ہیں۔چین میں متاثرہ افراد کی تعداد 80 ہزار ہے اور 53 ہزار سے زائد افراد صحت یاب ہو کر گھروں میں جا چکے ہیں جبکہ اب تک 3200 سے زائد افراد جان کی بازی ہار گئے ہیں۔ اس ھوالے سے ان کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد 5 ہے اور اللہ تعالیٰ کا شکر ہے کہ پنجاب میں کورونا وائرس کا کوئی کیس رپورٹ نہیں ہوا۔ک

ورونا وائرس کے حوالے سے احتیاطی تدابیر کیلئے جامع ایس او پیز پر عملدرآمد کیا جا رہا ہے۔ عوام کی بھلائی کے لیے انہوں نے کہا کہ عوام کو اس ضمن میں آگاہی دینے کیلئے میڈیا کا کردار بہت اہمیت کا حامل ہے۔ پاکستان میں کیس رپورٹ ہونے سے کئی روز قبل پنجاب حکومت نے اس حوالے سے احتیاطی اقدامات کا آغاز کیا اور کورونا وائرس کی صورتحال کا جائزہ لینے کیلئے کابینہ کمیٹی تشکیل دی گئی۔ کابینہ کمیٹی روزانہ کی بنیاد پر میٹنگ کرکے صورتحال پر نظر رکھے ہوئے ہے۔ یہی وجہ ہے کہ ضروری ساز و سامان کی خریداری کیلئے 236 ملین روپے کے فنڈز جاری کئے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سینٹرل، نارتھ اور ساؤتھ پنجاب میں ہسپتالوں کو مخصوص کیا گیا ہے۔ ہسپتالوں میں ہائی ڈیپنڈنسی یونٹس قائم کر دیئے گئے ہیں جبکہ ائیرپورٹس اور داخلی راستوں پر غیر ملکیوں کی سکریننگ کی جا رہی ہے۔ وفاقی حکومت کے ساتھ قریبی رابطے میں ہیں اور کورونا وائرس کی صورتحال کو 24 گھنٹے مانیٹر کیا جا رہا ہے۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہا کہ پنجاب حکومت کسی بھی صورتحال سے نمٹنے کیلئے تیار ہے اور میں نے کورونا وائرس کی مانیٹرنگ کیلئے قائم کنٹرول روم کا خود دورہ کیا ہے اوراس حوالے سے میٹنگز بھی کی ہیں۔ لاہور میں کورونا وائرس کی تشخیص کی سہولت موجود ہے۔ ایران سے آنے والے زائرین کی سکریننگ کی گئی ہے۔ اس کے علاوہ ورکنگ گروپ بھی تشکیل دیا گیا ہے جو صورتحال کا جائزہ لے کر اقدامات کرے گا۔ وزیراعظم عمران خان کو اگلے ہفتے جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کے قیام کے بارے میں بریفنگ دی جائے گی۔

اب جبکہ دنیا بھر میں کرونا وائرس بری طرح لوگوں میں منتقل ہو کر جان لیوا ثابت ہو رہا ہے، ایسے میں ملک پاکستان کے باسی بھی پریشانی میں مبتلا دکھائی دے رہے ہیں لیکن کے پی کے، سندھ، بلوچستان سمیت پنجاب میں اس طرح کے زیادہ افراد سامنے نہیں آسکے جبکہ سی ایم پنجاب عثمان بزدار کی جانب سے اور حکومت وقت کی جانب سے ائیر پورٹ پر کئے جانیوالے اقدامات قابل تحسین،قابل ستائش اور قابل تعریف ہیں،وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار شاید ملک پاکستان کے وہ وزیراعلیٰ ہیں جو باتیں کم اور عملی میدان میں زیادہ دکھائی دیتے ہیں۔ اس لئے وزیر اعلیٰ عثمان بزدار نے بر وقت اپنی ٹیم کو ریڈی کر کے اس جان لیوا بیماری سے نمٹنے کے لیے فوری طور پر اقدامات کئے، جس کا رزلٹ آج دنیا بھر میں سامنے ہے کہ پنجاب سمیت ملک کے بیشتر صوبوں میں اس بیماری کے بہتر اقدامات ہوئیاور دنیا بھر میں تیزی سے پھیلنے والی اس بیماری کو اس حکومت اور پنجاب حکومت نے اپنی عقلمندی کے ساتھ ہنگامی بنیادوں پر حل کیا۔ حالانکہ یہی وہ وائرس ہے جس سے دنیا بھر میں تباہی مچی ہوئی ہے لیکن شکر ہے کہ ہمارے ملک میں بہترین اقدامات اس حکومت کی کامیابی قرار دی جا سکتی ہے۔کرونا وائرس سے ہونے والی اموات اپنی جگہ،لیکن حکومت پنجاب کے بہترین اقدامات کے باعث پنجاب بھر میں کرونا وائرس کا مریض سامنے نا آنا کسی معجزے سے کم نہیں اس کے لئے حکومت وقت کے اقدامات کی تعریف بھی کرنا ہو گی جنہوں نے بروقت انتظامات سے اس ناممکن بیماری کے ممکن اقدامات کر کے اپنی بہترین حکمت عملی سے عوام کو سکھ کا سانس لینے دیا۔

مزید : رائے /کالم