لاہور قلندرز نے مسلسل تیسرا میچ جیت لیا، پشاور زلمی کو کتنی وکٹوں سے شکست دی؟ ناقابل یقین خبر آ گئی

لاہور قلندرز نے مسلسل تیسرا میچ جیت لیا، پشاور زلمی کو کتنی وکٹوں سے شکست دی؟ ...
لاہور قلندرز نے مسلسل تیسرا میچ جیت لیا، پشاور زلمی کو کتنی وکٹوں سے شکست دی؟ ناقابل یقین خبر آ گئی

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) کے 24 ویں میچ میںلاہو رقلندرز نے فخر زمان اور کرس لین کی عمدہ اور دھواں دار بلے بازی کی بدولت 5 وکٹوں سے شکست دے کر ٹورنامنٹ میں مسلسل تیسری فتح حاصل کر کے پلے آف مرحلے میں کوالیفائی کرنے کی امیدیں مزید روشن کر لی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق قذافی سٹیڈیم لاہور میں کھیلے جا رہے میچ میں پشاور زلمی کے 187 رنز کے تعاقب میں سہیل اختر اور فخر زمان نے اننگز کا آغاز کیا اور ذمہ دارانہ بلے بازی کرتے ہوئے پہلی وکٹ کی شراکت میں 50 رنز جوڑے تاہم اس موقع پر سہیل اختر رن آﺅٹ ہو گئے، انہوں نے 19 گیندوں پر 3 چوکوں کی مدد سے 21 رنز بنائے۔ تیسرے نمبر پر بیٹنگ کیلئے آنے والے کرس لین نے فخر زمان کیساتھ مل کر عمدہ اننگز کھیلی اور دوسری وکٹ کی شراکت میں 84 رنز جوڑ کر مجموعی سکور 146 تک پہنچا دیا تاہم کرس لین اس موقع پر کارلوس بریتھ ویٹ کی گیند پر یاسر شاہ کے ہاتھوں کیچ ہو گئے، انہوں نے دھواں دار بلے بازی کرتے ہوئے 32 گیندوں پر 3 چھکوں اور 6 چوکوں کی مدد سے 59 رنز کی اننگز کھیلی۔

پشاور زلمی کے کپتان وہاب ریاض نے 148 کے مجموعی سکور پر فخر زمان کی اننگز کا بھی خاتمہ کر دیا جنہوں نے 45 گیندوں پر 3 چھکوں اور 4 چوکوں کی مدد سے 63 رنز بنائے۔ آل راﺅنڈر محمد حفیظ بھی خاطرخواہ کارکردگی دکھانے میں کامیاب نہ ہو سکے اور محض 4 رنز بنا کر ہی کارلوس بریتھ ویٹ کی گیند پر لوئس گریگوری کے ہاتھوں کیچ ہو گئے۔ لاہور قلندرز کے ’ہیرو‘ بین ڈنک کا بلا رنز اگلنے میں ناکام رہا اور وہ صرف 7 رنز بنا کر ہی چلتے بنے۔ پانچ وکٹیں گرنے کے بعد ڈیوڈ ویزے اور سمت پٹیل نے ذمہ دارانہ بلے بازی کرتے ہوئے اپنی ٹیم کو ٹورنامنٹ میں لگاتار تیسری فتح دلا دی۔ دونوں کھلاڑیوں نے ہی 11,11 رنز کی اہم اننگز کھیل کر ٹیم کو فتح سے ہمکنار کیا۔

پشاور زلمی کی جانب سے کارلوس بریتھ ویٹ سب سے کامیاب باﺅلر رہے جنہوں نے 2 اوورز میں 21 رنز کے عوض 3 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی جبکہ وہاب ریاض نے ایک وکٹ حاصل کی۔

قبل ازیں لاہور قلندرز کے کپتان سہیل اختر نے ٹاس جیت کر پشاور زلمی کو بیٹنگ کی دعوت دی جس نے شعیب ملک اور حیدر علی کی عمدہ اور ذمہ دارانہ بلے بازی کی بدولت7 وکٹوں کے نقصان پر 187 رنز بنائے۔ پشاور زلمی کی اوپننگ جوڑی کامران اکمل اور ٹام بینٹن نے اننگز کا آغاز کیا اور شاہین شاہ آفریدی نے پہلے اوور کی دوسری گیند پر ہی ٹام بینٹن کو محمد حفیظ کے ہاتھوں کیچ کروا کر پویلین کی راہ دکھا دی۔

سمت پٹیل نے دوسرے ہی اوور میں اپنی ٹیم کو ایک اور کامیابی دلا دی اور لائم لیونگ سٹون ان کی گیند پر باﺅنڈری لگانے کی کوشش میں فخر زمان کے ہاتھوں کیچ ہو گئے، وہ صرف 4 رنز بنا سکے۔ اوپننگ بلے باز کامران اکمل کے ارادے خطرناک نظر آئے جنہوں نے 1 چھکے اور 1 چوکے کی مدد سے 12 رنز کی اننگز کھیلی مگر اس سے پہلے کہ وہ مزید خطرناک ثابت ہوتے سمت پٹیل نے 24 کے مجموعی سکور پر انہیں بھی پویلین کی راہ دکھا دی۔

تجربہ کار آل راﺅنڈر شعیب ملک اور نوجوان بلے باز حیدر علی نے عمدہ اور جارحانہ بلے بازی کرتے ہوئے چوتھی وکٹ کی شراکت میں 116 رنز جوڑے اور مجموعی سکور 140 تک پہنچا دیا تاہم اس موقع پر شعیب ملک ڈیوڈ ویزے کی گیند پر شاٹ لگانے کی کوشش میں باﺅنڈری کے قریب کھڑے فخر زمان کے ہاتھوں کیچ ہو گئے، انہوں نے 43 گیندوں پر 2 چھکوں اور 7 چوکوں کی مدد سے 62 رنز بنائے۔ آل راﺅنڈر لوئس گریگوری نے میدان میں آتے ہی ڈیوڈ ویزے کو زوردار چھکا رسید کر کے جارحانہ عزائم ظاہر کئے تاہم 155 کے مجموعی سکور پر شاہین شاہ آفریدی نے انہیں کلین بولڈ کر دیا، وہ 4 گیندوں پر 1 چھکے کی مدد سے 8 رنز بنا سکے۔ حیدر علی نے جارحانہ بلے بازی کا سلسلہ جاری رکھا اور تمام باﺅلرز کو ہی باﺅنڈریز لگائیں مگر 157 کے مجموعی سکور پر وہ دلبر حسین کی گیند پر بین ڈنک کے ہاتھوں کیچ ہو گئے، انہوں نے عمدہ بلے بازی کرتے ہوئے 43 گیندوں پر 3 چھکوں اور 4 چوکوں کی مدد سے 69 رنز بنائے۔ کپتان وہاب ریاض بلے سے متاثرکن کارکردگی دکھانے میں ناکام رہے اور صرف 1 سکور بنا کر شاہین شاہ آفریدی کے ہاتھوں کلین بولڈ ہو گئے۔ حسن علی نے 7 اور کارلوس بریتھ ویٹ 16 رنز بنانے میں کامیاب ہو سکے۔

لاہور قلندرز کی جانب سے شاہین شاہ آفریدی سب سے کامیاب باﺅلر رہے جنہوں نے 4 اوورز میں 28 رنز کے عوض 3 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی اور سمت پٹیل نے 2 وکٹیں حاصل کیں جبکہ دلبر حسین اور ڈیوڈ ویزے ایک، ایک کھلاڑی کو آﺅٹ کرنے میں کامیاب ہوئے۔

واضح رہے کہ میچ کیلئے پشاور زلمی کی قیادت وہاب ریاض کر رہے ہیں جبکہ دیگر کھلاڑیوں میں لائم لیونگ سٹون، کامران اکمل، حیدر علی، ٹام بینٹن، شعیب ملک، لوئس گریگوری، کارلوس بریتھ ویٹ، حسن علی، راحت علی اور یاسر شاہ شامل ہیں۔

لاہور قلندرز کی قیادت سہیل اختر کر رہے ہیں جبکہ دیگر کھلاڑیوں میں فخر زمان، کرس لین، محمد حفیظ، بین ڈنک، شاہین شاہ آفریدی، سمت پٹیل، ڈیوڈ ویزے، حارث رﺅف، معاذ خان اور دلبر حسین شامل ہیں۔

مزید : کھیل /PSL /PSL News Update