بااثر افراد نے شادی شدہ لڑکی اغوا کرلی، نکاح کی تیاریاں

10 مئی 2018 (13:01)

وہاڑی (ویب ڈیسک) شادی شدہ لڑکی دو افراد نے ساتھیوں سمیت زبردستی اغواءکرلی، مبینہ طور پر نکاح پر نکاح کی تیاریاں، پولیس نے 15 روزگزرنے کے باوجود کوئی کارروائی نہ کی۔

روزنامہ خبریں کے مطابق عرفانہ بی بی زوجہ محمد مختیار ذات پنوار سکنہ بھٹہ اکرام جی بلاک وہاڑی کی رہائشی نے اپنے شوہر محمد مختار اور بیٹی اقراءمغویہ کے سسر محمد اقبال کے ساتھ بتایا کہ اقراءمختار کی شادی 22/11/14کو محمد اقبال کے بیٹے رمضان اقبال کے ساتھ ہوئی۔ اقراءبی بی شرقی کالونی وہاڑی میں لوگوں کے گھروں میں کام کرتی تھی، مورخہ 25 اپریل 2018ءکو تقریباً 12 بجے دن کام کاج کرکے گھر جانے کیلئے روانہ ہوئی تو رات گئے واپس نہ آئی۔ تلاش کرنے پر نہ ملی تو تھانہ رانہوال میں درخواست گزاری، چند یوم بعد معلوم ہوا کہ ملزمان فہیم، ندیم پسران محمد ریاض کھوکھر سکنہ پل کھادر وہاڑی، منظوراں بی بی زوجہ محمد ریاض اور محمد آفتاب کامران ولد ذوالفقار علی بستی سکنہ خانیوال مغوی اقراءکو یہ کہہ کر اس کے والد مختارکا حادثہ ہوگیا ہے، کار پر بٹھا کر لے گئے ۔

گواہان کے بتانے پر اغواءکنندگان جن میں دوان کے جانے والے ہیں سے بچی واپسی کا مطالبہ کیا، موبائل پر بھی ملزمان کا ڈیٹا موصول ہوچکا ہے، نادرا ریکارڈ موجو دہے، ملزمان مغوی کی واپسی پر بہت لیت و لعل سے کام لے رہے ہیں اور مغوی کے والدین کو جان سے ماردینے کی دھمکیاں دے رہے ہیں، ملزمان مغویہ سے زناءحرام کاری اور نکاح پر نکاح کی تیاریاں کررہے ہیں۔ ڈی پی او وہاڑی سے مطالبہ ہے کہ فی الفور کارروائی کرکے ملزمان کو گرفتار اور مغویہ برآمد کی جائے۔

مزیدخبریں