کیا یہ واقعی وزیراعظم عمران خان کے بیٹے کی گرفتاری کی تصویر ہے ؟ سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی اس تصویر کی اصل حقیقت سامنے آ گئی

کیا یہ واقعی وزیراعظم عمران خان کے بیٹے کی گرفتاری کی تصویر ہے ؟ سوشل میڈیا ...
کیا یہ واقعی وزیراعظم عمران خان کے بیٹے کی گرفتاری کی تصویر ہے ؟ سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی اس تصویر کی اصل حقیقت سامنے آ گئی

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )وزیراعظم عمران خان کے دونوں صاحبزادے برطانیہ میں اپنی والدہ جمائمہ خان کے ساتھ رہتے ہیں اور کبھی کبھار عمران خان بھی ان سے ملنے جاتے رہتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق سوشل میڈیا پر ایک تصویر وائرل ہو رہی ہے جس میں ایک نوجوان کو پولیس نے گرفتارکر رکھاہے اور اسے پکڑ کر لے جارہے ہیں ، اس تصویر کے بارے میں افواہیں پھیلائی جارہی ہیں کہ یہ وزیراعظم عمران خان کا بیٹا ہے اور عجیب و غریب قسم کے الزامات کی بارش کی جارہی ہے تاہم ان افواہوں میں کوئی صداق نہیں بلکہ یہ ایک بے بنیاد پراپیگنڈہ ہے جو کہ وزیراعظم کے صاحبزادوں کیخلاف کیا ہے ۔

شہریار ناصر نامی ٹویٹر صارف نے اس تصویر کے حوالے سے تفصیلات سے آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ پولیس کے ہاتھوں گرفتار ہونے والا نوجوان دراصل وہ لڑکا ہے جس نے مسلمانوں کیخلاف زہر اگلنے والے آسٹریلیا کے سینیٹر فریزر کو میڈیا سے گفتگو کے دوران سر پر انڈہ مارا تھا اور اس کے بعد اس نوجوان لڑکے کو پولیس نے گرفتار کر لیا تھا ، یہ وہ لڑکا ہے ۔ شہریار ناصر کا کہناتھا کہ یہ عمران خان کا بیٹا نہیں ہے ۔

سوشل میڈیا پر ہر موضوع پر بحث اور معلومات مل جاتی ہیں تاہم اس میں بہت سی معلومات ناقابل بھروسہ اور جھوٹ پر بھی مبنی ہوتی ہیں جن پر اعتبار نہیں کیا جا سکتاہے اس لیے اگر کوئی معلومات آپ کو ملیں تو اس کی تشہیر سے قبل اس کی تصدیق کرنی چاہیے تاکہ جھوٹی معلومات کے ذریعے کسی کی عزت مجروح نہ ہو۔

مزید : ڈیلی بائیٹس