’وہ میرا ریپ کرنے کے بعد مجھے اسلامی ویڈیو دکھاتا تھا‘

’وہ میرا ریپ کرنے کے بعد مجھے اسلامی ویڈیو دکھاتا تھا‘
’وہ میرا ریپ کرنے کے بعد مجھے اسلامی ویڈیو دکھاتا تھا‘

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں ایک نوجوان کو لڑکی سے جنسی زیادتی کرنے کے الزام میں گرفتار کرکے عدالت میں پیش کیا گیا ہے جہاں متاثرہ لڑکی نے بیان دیتے ہوئے ایسی بات بتائی کہ سن کر ہر مسلمان کو غصہ آ جائے۔ میل آن لائن کے مطابق 23سالہ محمد خان نامی یہ بدطینت شخص سمتھ وِک میں رہتا تھا جہاں اس نے اپنی 21سالہ گرل فرینڈ کو 18ماہ تک جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا۔ لڑکی نے عدالت میں بتایا کہ ملزم اسے جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد اسلامی ویڈیوز دکھاتا تھا تاکہ وہ اچھی گرل فرینڈ بن سکے۔

لڑکی نے اپنے بیان میں مزید کہا کہ ”میں اس شخص کے ساتھ نہیں رہنا چاہتی تھی لیکن اس نے مجھے سنگین نتائج کی دھمکیاں دے کر مجبوراً اپنے ساتھ رکھا۔ میں خوفزدہ تھی کہ اگر اسے چھوڑ کر گئی تو یہ مجھے نقصان پہنچا دے گا۔ ملزم مجھے آئے روز جسمانی تشدد کا نشانہ بھی بناتا تھا اورطعنے دیتا تھا کہ تم کبھی اچھی گرل فرینڈ نہیں بن سکتیں۔“ پراسیکیوٹرز نے عدالت میں بتایا کہ ”لڑکی کے والدین کو شک ہونے پر انہوں نے پولیس کو اطلاع دی اور تب کہیں لڑکی اس شخص کے چنگل سے نکل پائی۔ عدالت نے ملزم کو جرم ثابت ہونے پر 12سال قید کی سزا سنا کر جیل بھجوا دیا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /برطانیہ