شاہین کل انگلینڈ کیخلاف جیت کیلئے پرعزم

شاہین کل انگلینڈ کیخلاف جیت کیلئے پرعزم
شاہین کل انگلینڈ کیخلاف جیت کیلئے پرعزم

  

پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان دوسرا ون ڈے کل کھیلا جائے گا ، پہلا میچ بارش کی وجہ سے منسوخ  ہو گیا تھا ،پاکستان کی ٹیم نے اچھا آغاز نہیں کیا تھا بہرحال شائقین کرکٹ کو امید ہے کہ پاکستانی ٹیم کل  کھیلے جانے والے میچ میں عمدہ پرفارمنس کا مظاہر کرے گی اور انگلش ٹیم کو شکست سے دوچار کرنے میں کامیاب ہوگی،اس سے قبل ٹی ٹونٹی میچ میں پاکستانی ٹیم کو شکست ہوئی تھی۔ پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان پانچ میچز کی سیریز کھیلی جانی ہے جس میں سے ایک میچ تو بارش کی نذر ہوگیا اور کل دوسرے میچ میں کیا بنتا ہے؟ یہ کل  پتہ چل جائے گا۔ ورلڈ کپ سے قبل پاکستانی ٹیم کے لئے اس سیریز میں کامیابی حاصل کرنا بہت ضروری ہے اور بلاشبہ یہ ایک اہم سیریز ہے جس سے پاکستان کی ٹیم بھرپور فائدہ اٹھاسکتی ہے اور ورلڈ کپ میں خطرے کی گھنٹی بجاسکتی ہے۔

پاکستان کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد پرعزم ہیں کہ وہ کل کا میچ جیتنے میں کامیاب ہوجائیں گے اور اس کے لئے بھرپور تیاری کی ہوئی ہے ۔ماضی میں اگر دونوں ٹیموں کے درمیان انگلش سر زمین پر کھیلی جانے والی سیریز کی بات کی جائے تو انگلش ٹیم کا پلڑا بھاری ہے اور اس نے اپنی سر زمین پر پاکستانی ٹیم کو ہمیشہ ہی ٹف ٹائم دیا ہے ۔ورلڈ کپ کی فیورٹ ٹیموں میں انگلینڈ کی ٹیم بھی شامل ہے اور اس کو اپنے ہوم گراونڈ کا بھی بھرپور فائدہ حاصل ہوگا ،اگر وہ پاکستان کے خلاف اس سیریز میں کامیابی حاصل کرلیتی ہے تو یقینی طور پر اس کو بھی اس کا ورلڈ کپ میں فائدہ ملے گا۔ پاکستان کی ٹیم کو انگلینڈ کے خلاف کل میچ میں پہلے کھیلنے کی ضرورت ہے، اگر پاکستان  ٹاس جیتتا ہے  تو اس کو پہلے بیٹنگ کرنی چاہئیے، میچ میں پاکستان کو  ایک بڑا سکور کرنے کی ضرورت ہے اور اس کے لئے پاکستان کے اوپنرز کو  بھی لمبا آغاز فراہم کرنا ہو گا ۔پاکستانی اوپنرز بابر اعظم اور فخر زمان کو جم کر کھیلنے کی ضرورت ہے اور ایک لمبی پارٹنر شپ کی ضرو رت ہے تاکہ وہ ورلڈ کپ کے میچز میں بھی عمدہ پرفارمنس کا مظاہرہ کرسکیں اور اس کا اعتماد بھی بڑھ سکے۔

اب دیکھنا یہ ہے کہ پاکستان کی ٹیم کل کا میچ جیتنے میں کامیاب ہوتی ہے کہ نہیں؟ یہ آسان کام نہیں ہے اور اس کے لئے پاکستانی ٹیم کو بہت زیادہ محنت کرنے کی ضرورت ہے ۔کپتان سرفراز احمد کے لئے بھی ایک بہت بڑا امتحان ہے اور اس کے ساتھ ساتھ ٹیم کے ہر کھلاڑی کو بھی اعتماد کے ساتھ کھیل پیش کرنے کی ضرورت ہے۔ انگلش ٹیم اس وقت مکمل فارم میں ہے اور اس کے بیٹسمین بہت اچھی پرفارمنس کا مظاہرہ کررہے ہیں۔ کپتان مورگن بہت با اعتماد کھلاڑی ہیں اور اب تک انہوں نے اپنی ٹیم کے لئے جو خدمات سر انجام دی ہیں وہ قابل تعریف ہیں۔پاکستان کی ٹیم اگر یہ سیریز اپنے نام کرنے میں کامیاب ہوجاتی ہے تو اس کے لئے ورلڈ کپ کے ابتدائی میچ میں ویسٹ انڈیز کی ٹیم کو شکست دینا مشکل نہیں ہوگا کیونکہ اس جیت کے بعد اس کے لئے ویسٹ انڈیز کی ٹیم آسان حریف ہوگی۔ پاکستانی ٹیم کو اس موقع پر اپنی تمام خامیوں کوردور کرناہوگا اور صرف اور صرف میچ میں کامیابی کے لئے کھیلنا ہوگا ۔کل کا میچ امید ہے کہ بارش کی نذر نہیں ہوگا اور شائقین کرکٹ کو  ایک کانٹے دار مقابلہ دیکھنے کو ملے گا ، امید ہے کہ اس مقابلہ میں پاکستانی ٹیم کی جیت ہوگی اور اگلے میچز میں بھی پاکستانی ٹیم ہی فاتح ہوگی۔

نوٹ:یہ بلاگر کا ذاتی نقطہ نظر ہے جس سے ادارے کا متفق ہونا ضروری نہیں ۔

مزید : بلاگ