وہ امیر ترین عرب ملک جہاں غیر ملکی مزدور بھیک مانگنے پر مجبور ہوگئے

وہ امیر ترین عرب ملک جہاں غیر ملکی مزدور بھیک مانگنے پر مجبور ہوگئے
وہ امیر ترین عرب ملک جہاں غیر ملکی مزدور بھیک مانگنے پر مجبور ہوگئے

  

دوحہ (ڈیلی پاکستان آن لائن) امیر ترین عرب ملک قطر میں حکومت کی ناقص پالیسیوں کے باعث غیر ملکی مزدور بھیک مانگنے پر مجبور ہوگئے ہیں۔

برطانوی اخبار کی رپورٹ کے مطابق قطر میں کورونا لاک ڈاؤن کے دوران غیر ملکی مزدوروں کو بے سہارا چھوڑ دیا گیا۔ حکومت نے کمپنیوں کو اجازت دی کہ وہ مزدوروں کو بغیر تنخواہ کے چھٹی پر بھیج دیں یا ان کے کنٹریکٹ ختم کردیں۔

قطری حکومت کی جانب سے مزدوروں کے تحفظ کے بارے میں کوئی واضح پالیسی نہیں دی گئی جس کی وجہ سے غیر ملکی مزدور بے سہارا اور پریشان ہیں۔ قطر میں پھنسے مزدور نہ تو ملک چھوڑنے کے قابل ہیں اور نہ ہی انہیں دیگر سہولیات میسر ہیں۔

قطر کی حکومت نے کمپنیوں سے کہا تھا کہ وہ مزدوروں کو کھانا اور رہائش کی فراہمی یقینی بنائیں لیکن جو صورتحال پیدا ہوچکی ہے اس سے واضح ہوتا ہے کہ اس پالیسی کو پر عملدرآمد نہ ہونے کے برابر ہے۔

مزید :

عرب دنیا -