بھارت راضی ہوجائے تو مسئلہ کشمیر کے حل میں مددکرنے کو تیار ہیں : امریکہ

بھارت راضی ہوجائے تو مسئلہ کشمیر کے حل میں مددکرنے کو تیار ہیں : امریکہ
بھارت راضی ہوجائے تو مسئلہ کشمیر کے حل میں مددکرنے کو تیار ہیں : امریکہ

  

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک) امریکہ نے کہا ہے کہ بھارت رضامند ہو تو ہم مسئلہ کشمیر کے حل میں کردار ادا کر سکتے ہیں،امریکہ از خود معاملے میں نہیں پڑے گا،خطے میں امن اور خوشحالی کے لئے پاک بھارت مسائل کا حل ضروری ہے،دونوں ملکو ں کے درمیان ہر قسم کے مذاکرات کی حوصلہ افزائی کریں گے۔ امریکی میڈیا کے مطابق مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے ہندوپاک کو مذاکرات کی نوعیت اور رفتار طے کرنے کا مشورہ دیتے ہوئے امریکہ نے واضح کیاہے کہ اگر بھارت اور پاکستان چاہیں تو امریکہ اس مسئلہ کے حل کیلئے کسی بھی طرح کا رول ادا کرنے کو تیار ہے ۔ایک سینئر امریکی عہدیدار نے کہامجھے لگتا ہے کہ اگر دونوں ممالک کشمیر معاملہ پر ہم سے کوئی کردار ادا کرنے کی خواہش ظاہر کریں تو ہم ایسے امکانات کا جائزہ لینے اور ان پر تبادلہ خیال کیلئے تیار ہیں تاہم ہم امریکہ از خود اس معاملے میں نہیں پڑے گا ،اس کا فیصلہ ان دوممالک کو کرنا ہوگا کہ وہ ہم سے کس طرح کا کردار ادا کروانا چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ہندوستان اور پاکستان کے درمیان مسائل کا حل ضروری ہے اور دونوں ملکوں کو بات چیت سے ہر مسئلہ حل کرناچاہئے ۔ انہوںنے کہاکہ امریکہ ہمیشہ دونوں ملکوں کے درمیان کسی بھی طرح کارول اداکرنے کو تیار ہے لیکن اب یہ ہندوپاک پر منحصر ہے کہ وہ ہم سے کس طرح کارول کرواناچاہیں گے۔امریکی عہدیدارنے کہاکہ وہ دونوں ملکوں کے درمیان ہونے والی کسی بھی پیش رفت کی حمایت کرتے ہیں ۔ واضح رہے کہ پاکستا نی وزیر اعظم نوازشریف نے اپنے حالیہ دورہ امریکہ کے دوران امریکی حکام سے کشمیر مسئلہ کے حل کیلئے کردارادا کرنے کا مطالبہ کیاتھا۔ تاہم امریکی حکام نے اس مطالبے کو مسترد کرتے ہوئے کہاتھاکہ دونوں ملک آپس میں یہ فیصلہ کریں کہ وہ کس طرح سے مسائل حل کرسکتے ہیں ۔

مزید :

بین الاقوامی -اہم خبریں -