سنی علماءنے امن کیلئے ملاعمر سے مدد مانگ لی، طالبان کو پاکستانی آئین ماننے پر مجبور کرنے کی اپیل

سنی علماءنے امن کیلئے ملاعمر سے مدد مانگ لی، طالبان کو پاکستانی آئین ماننے ...
سنی علماءنے امن کیلئے ملاعمر سے مدد مانگ لی، طالبان کو پاکستانی آئین ماننے پر مجبور کرنے کی اپیل

  

لاہور( مانیٹرنگ ڈیسک) کالعدم تحریکِ طالبان پاکستان کی طرف سے حکومت کے ساتھ مذاکرات سے انکار کے اعلان کے بعد سنی علماءکونسل نے امن قائم کرنے کیلئے طالبان لیڈر ملا عمر سے مدد کی درخواست کردی ہے اور اپیل کی ہے کہ وہ اپنا مثبت کرادار ادا کرتے ہوئے طلابن کو پاکستان آئین تسلیم کرنے پر مجبور کریں، سنی اتحادءکونسل ملاعمر کو یقین دہانی کرائی ہے کہ وہ ڈرون حملوں کیلاف بھی موثر کردار ادا کریں گے اور اس مقصد کیلئے ملک گیر دستخطی مہم چلائیں گے ، ڈرون حمکلوں کے خلاف دستخطی مہہم کے بعد ڈرون حملوں کیلاف اقوامِ متحدہ کو یادداشت ارسال کریں گے ۔سنی علماءنے اپنے بیان میں ملاعمر سے درخواست کی ہے کہ وہ طالبان کو پاکستان کی ریاستی اتھارٹی ماننے پر راضی کریں،انہوں نے کہا کہ پاکستان میں طالبان کا طرزِ عمل جہاد کے شروع اصولوں اور شرائط کے منافی ہے ۔ بیان میں ملاعمر کو یہ بھی باور کرایا گیا ہے کہ پاکستان نے ہر مشکل وقت میں افغان قوم کا ساتھ دیا ہے اسلئے وہ بھی بدامنی کے اس کڑے وقت میں قیامِ امن کیلئے اپنا مثبت کردارادا کریں۔

مزید :

قومی -