اس آدمی نے 4 ماہ کیلئے صابن استعمال کرنا چھوڑدیا، صحت اور جسم میں کیا تبدیلی آئی؟ جان کر آپ ابھی صابن اُٹھا کر باہر پھینک دیں گے

اس آدمی نے 4 ماہ کیلئے صابن استعمال کرنا چھوڑدیا، صحت اور جسم میں کیا تبدیلی ...
اس آدمی نے 4 ماہ کیلئے صابن استعمال کرنا چھوڑدیا، صحت اور جسم میں کیا تبدیلی آئی؟ جان کر آپ ابھی صابن اُٹھا کر باہر پھینک دیں گے

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک)آج کے دور میں صابن، باڈی سپرے و دیگر اسی نوع کی مصنوعات ہماری زندگیوں کا لازمی جزو بن چکی ہیں مگر ہمیں احساس نہیں کہ ان میں شامل کیمیکلز ہماری صحت کے لیے کس قدر مضر ہیں۔ برطانیہ کی یونیورسٹی کالج لندن کے ایک پروفیسر نے تجربے کے طور پرصابن کا استعمال ترک کر دیا اور چار ماہ تک بغیر نہائے گزارے، جس کے انتہائی حیرت انگیز فوائد سامنے آئے۔ مالیکیولر بائیولوجی کے پروفیسر ڈاکٹرایڈم لی پوٹر کا کہنا تھا کہ ”میں بھی عام لوگوں کی طرح روزانہ نہاتا تھا، صابن و دیگر چیزیں استعمال کرتا تھا، مگر جب میں نے صابن کا استعمال چھوڑ دیا اور چار ماہ تک نہیں نہایا تو میری صحت حیران کن طور پر پہلے سے کہیں بہتر ہو گئی۔ میں پہلے سے زیادہ ہشاش بشاش رہنے لگا تھا۔ میرے جسم پر مفید بیکٹیریا کی نہ صرف تعداد بہت زیادہ ہو گئی تھی بلکہ ان کی اقسام میں بھی اضافہ ہو گیا تھا۔ تجربے کے آغاز پر کیے گئے ٹیسٹ کے مطابق میرے جسم پر بیکٹیریا کی 192اقسام موجود تھیں جو 4ماہ بعد 234ہو گئیں۔ “

نوجوان کا لیپ ٹاپ چوری ہوگیا اور پھر چند ماہ بعد فیس بک پر ایک ایسا پیغام آگیا کہ پڑھ کر واقعی پیروں تلے زمین نکل گئی، ایسا کیا لکھا تھا؟ آپ بھی جانئے اور کبھی بھی یہ غلطی نہ کریں

رپورٹ کے مطابق ڈاکٹر ایڈم کا کہنا تھا کہ ”انسانی جسم میں کل لگ بھگ 30ٹریلین خلیے ہوتے ہیں لیکن ہمارے جسم میں 37ٹریلین بیکٹیریا خلیے موجود ہوتے ہیں جن میں سے 370ارب براہ راست ہماری جلد کے اوپر رہتے ہیں۔ جب ہم اپنے جسم کو زیادہ دھوتے ہیں اور یہ مصنوعات استعمال کرتے ہیں تو ہماری جلد پر اچھے اور برے بیکٹیریا کی تعداد عدم توازن کا شکار ہو جاتی ہے جو ہمیں مختلف بیماریوں میں مبتلا کرتی ہے۔ہمیں اپنے جسم پر موجود بیکٹیریا کی اتنی ہی ضرورت ہے جتنی انہیں ہماری ہوتی ہے۔ اس لیے ہمیں بلاوجہ صابن و دوسری ایسی مصنوعات استعمال کرکے انہیں ضائع نہیں کرنا چاہیے۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -