دنیا کے بڑے آتش فشاں کے نیچے سائنسدانوں کو ایسی چیز مل گئی کہ کوئی تصور بھی نہ کرسکتا تھا، جان کر آپ بھی خدا کی قدرت پر عش عش کر اُٹھیں گے

دنیا کے بڑے آتش فشاں کے نیچے سائنسدانوں کو ایسی چیز مل گئی کہ کوئی تصور بھی نہ ...
دنیا کے بڑے آتش فشاں کے نیچے سائنسدانوں کو ایسی چیز مل گئی کہ کوئی تصور بھی نہ کرسکتا تھا، جان کر آپ بھی خدا کی قدرت پر عش عش کر اُٹھیں گے

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) جنوبی امریکہ کے پہاڑی سلسلے اینڈس کے اٹورنکو (Uturuncu)نامی آتش فشاں پہاڑ کے نیچے ماہرین نے ایک ایسی چیز دریافت کر لی ہے جس کے متعلق جان کر آپ حیران رہ جائیں گے۔ رپورٹ کے مطابق سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ اس آتش فشاں پہاڑ کے نیچے ایک بڑی جھیل موجود ہیں جس میں پگھلی ہوئی چٹانیں ہیں۔ یہ جھیل آتش فشاں کے نیچے 9میل کی گہرائی میں موجود ہے۔

سورج کے غائب ہونے میں صرف 10 مہینے رہ گئے، ہم نے آج ہی آپ کو بتادیا ہے

سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ دنیا کے دیگر کئی آتش فشاں پہاڑوں کے نیچے بھی ممکنہ طور پر ایسی جھیلیں ہو سکتی ہیں جو اس امر کی وضاحت کر سکتی ہیں کہ آتش فشاں کیسے اور کیوں پھٹتے ہیں۔ان زیرزمین جھیلوں کا زمین کی پرت بنانے میں بھی اہم کردار ہو سکتا ہے۔برسٹل یونیورسٹی کے پروفیسر اور آتش فشاں پہاڑوں کی تحقیقات کرنے والے ماہر جان بلنڈے کا کہنا ہے کہ ” اٹورنکو کے نیچے دریافت ہونے والی جھیل میں پانی اس قدر زیادہ ہے کہ Huronاور Superiorنامی دو جھیلوں کا پانی اس کے برابر ہو گا۔ ان دو جھیلوں میں بالترتیب 850اور 2ہزار 903کیوبک میل پانی موجود ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -