کھویا ہوا موبائل فون ڈھونڈنے کیلئے 4 سالہ بچی کا گلاکاٹ کر جان کی قربانی دے دی گئی

کھویا ہوا موبائل فون ڈھونڈنے کیلئے 4 سالہ بچی کا گلاکاٹ کر جان کی قربانی دے دی ...
کھویا ہوا موبائل فون ڈھونڈنے کیلئے 4 سالہ بچی کا گلاکاٹ کر جان کی قربانی دے دی گئی

  

نئی دلی (نیوز ڈیسک) توہم پرستی یوں تو کسی نہ کسی صورت ساری دنیا میں پائی جاتی ہے لیکن بھارت میں اس کی ایک ایسی بھیانک مثال دیکھنے میں آئی ہے کہ جس نے دنیا کو لرزا کر رکھ دیا ہے۔ ویب سائٹ WWWN کے مطابق آسام میں ایک ننھی بچی کو قتل کرکے اس کے جسم کے ٹکڑے کردئیے گئے، اور اس ہولناک جرم کی وجہ یہ سامنے آئی ہے کہ ایک کھویا ہوا موبائل فون ڈھونڈنے کے لئے ننھی بچی کے جسم کے ٹکڑے کر کے دیوتاﺅں کے سامنے نذانے کے طور پر پیش کئے گئے۔

دنیا کی تاریخ کا مہنگا ترین شادی کارڈ،اندر کیا چیز لگی ہے؟جس کو ملا دیکھتا ہی رہ گیا

رپورٹ کے مطابق پولیس نے ہنومان بھومج نامی ایک شخص کو گرفتار کیا ہے جس کی بیٹی کا موبائل فون گم ہوگیا تھا۔ رپورٹ کے مطابق اس شخص نے موبائل فون ڈھونڈنے کے لئے دو افراد سے رابطہ کیا تو انہوں نے یہ وحشیانہ تجویز دی کہ دیوتاﺅں کے سامنے کسی بچے کی قربانی پیش کی جائے تاکہ وہ خوش ہوکر موبائل فون لوٹادیں۔ اس کے بعد ان درندوں نے اپنے منصوبے کو عملی جامہ پہنانے کے لئے ایک چار سالہ بچی کو اغوا کیا اور اسے قتل کرنے کے بعد اس کے جسم کو چھوٹے چھوٹے ٹکڑوں میں کاٹ کر اپنے دیوتاﺅں کے سامنے نذرانے کے طور پر پیش کیا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ مرکزی مجرم ہنومان بھومج اور اس کے ایک ساتھی کو گرفتار کرلیا گیا ہے جبکہ ایک ملزم مفرور ہے اور اس کی تلاش تاحال جاری ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -