سندھ کے نئے گورنر کی تعیناتی پرپیپلز پارٹی اور ایم کیو ایم وفاقی حکومت سے ناراض

سندھ کے نئے گورنر کی تعیناتی پرپیپلز پارٹی اور ایم کیو ایم وفاقی حکومت سے ...
سندھ کے نئے گورنر کی تعیناتی پرپیپلز پارٹی اور ایم کیو ایم وفاقی حکومت سے ناراض

  

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک)نئے گورنر کی تعیناتی کے فیصلے پر پیپلز پارٹی اور ایم کیو ایم حکومت سے ناراض نظر آتی ہیں دونوں کا کہنا ہے کہ نئے گورنر کی تعیناتی کے فیصلے سے پہلے اعتماد میں نہیں لیا گیا ہے،ایم کیو ایم پاکستان کی رابطہ کمیٹی کا کہنا ہے کہ بہتر ورکنگ ریلیشن کیلئے بہتر ہوتا کہ اعتماد میں لیا جاتا ۔

جیو نیوز کے مطابق ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا ہے کہ وفاق کوایم کیو ایم،پیپلزپارٹی اور دیگر جماعتوں سے مشاورت کرنی چاہیے تھی، نئے گورنر پر ایم کیو ایم اور دیگر جماعتوں سے مشاورت ہونی چاہیے تھی ، ہم نے ڈاکٹر عشرت العباد کو ہٹانے کا کبھی مطالبہ نہیں کیا تھا،عشرت العباد ایم کیو ایم کے نامزد گورنر تھے۔

ایم کیو ایم کی رابطہ کمیٹی کا کہنا ہے کہ عشرت العباد نے صلاحیت کے ساتھ سندھ کی خدمت کی ہے ،عشرت العباد ایم کیو ایم کے نامزد گورنر تھے،بہتر ورکنگ ریلیشنزکےلیے ایم کیو ایم پاکستان کو اعتماد میں لینا چاہیے تھا ، سندھ کی دوسری بڑی جماعت کو اعتماد میں نہ لینا جمہوری اقدارکے منافی ہے۔

مزید :

کراچی -