واپڈا ہاؤس پر پراپرٹی ٹیکس عائد کرنے کے خلاف درخواست پر فیصلہ محفوظ

واپڈا ہاؤس پر پراپرٹی ٹیکس عائد کرنے کے خلاف درخواست پر فیصلہ محفوظ

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے واپڈا ہاؤس پر ڈیڑھ کروڑ پراپرٹی ٹیکس عائد کرنے کے خلاف دائردرخواست پر فیصلہ محفوظ کر لیا۔جسٹس شاہد کریم نے واپڈا اتھارٹی کی طرف سے دائر درخواست پر سماعت کی، واپڈا کی طرف سے عمر شریف ایڈووکیٹ نے موقف اختیار کیا کہ واپڈا وفاقی حکومت کا ذیلی ادارہ ہے، وفاقی حکومت کے اداروں پر صوبائی حکومت پراپرٹی ٹیکس عائد نہیں کر سکتی، وفاقی حکومت کی طرف سے ڈپٹی اٹارنی جنرل نصر مراز نے موقف اختیار کیا کہ آئین کے آرٹیکل 165کے تحت وفاقی حکومت کے ادارے پراپرٹی ٹیکس سے مستثنی ہیں، محکمہ ایکسائز پنجاب اور پنجاب حکومت کی طرف سے اسسٹنٹ ایڈووکیٹ جنرل انوار حسین نے موقف اختیار کیا کہ صوبائی حکومت کسی بھی وفاقی حکومت کے ادارے سے پراپرٹی ٹیکس وصولی کر سکتی ہے، واپڈا ایک خودمختار ادارہ ہے، واپڈا ایکٹ کی دفعہ 13، 22 اور 24 کو ملا کر پڑھا جائے تو واپڈا ہاؤس پر پراپرٹی ٹیکس کی مد میں وفاقی حکومت کا کوئی عمل دخل نہیں ہے۔عدالت نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد واپڈا ہاؤس پر ڈیڑھ کروڑ روپے کے پراپرٹی ٹیکس کے خلاف درخواست پر فیصلہ محفوظ کر لیا۔

فیصلہ محفوظ

مزید :

صفحہ آخر -