ہڑتال کرنیوالے 21 ینگ ڈاکٹروں اور نرسوں کو فارغ کرنیکا فیصلہ

ہڑتال کرنیوالے 21 ینگ ڈاکٹروں اور نرسوں کو فارغ کرنیکا فیصلہ

  

لاہور(جنرل رپورٹر) محکمہ صحت نے میو ہسپتال کو میدان جنگ بنانے والے ینگ ڈاکٹروں اور نرسوں کے خلاف ایکشن شروع کردیا ہے جس کے تحت میڈیکل سپرٹنڈنٹ نے ہڑتالی اور سیاست کرنیو الے اور مریضوں کے لئے مسائل پیدا کرنیو الے 21ڈاکٹروں اور 21نرسوں کو ہڑتال ختم کرکے ڈیوٹی پر واپس آنے کی ڈیڈ لائن جاری کردی ہے جنہیں کہا گیا ہے کہ وہ ہر قسم کی ہڑتال کو ختم کرکے آج صبح آٹھ بجے تک ڈیوٹی پر واپس آ جائیں وگرنہ انہیں برطرف کردیا جائے گا۔سیکرٹری صحت نجم احمد شاہ کے حکم پر ایم ایس ڈاکٹر امجد شہزاد نے جن کو نوٹس جاری کئے ہیں ان میں پندرہ ہاؤس آفیسرز چھ پی جی ٹرینی اور 21نرسیں شامل ہیں ان میں ہڑتال کے لئے ڈاکٹروں کو اکسانے اور مجبور کرنے والے وائی ڈی اے کے اہم رہنما ڈاکٹر فیضان ‘ڈاکٹر وقاص اور ڈاکٹر مدثر بھی شامل ہیں ۔نوٹس میں کہا گیا ہے کہ وہ پورے ہسپتال کو میدان جنگ بنانے کا باعث بن رہے ہیں مریضوں کے لئے مسائل پیدا کررہے ہیں آؤٹ ڈور ان ڈور بند کروانے کی مذموم کوششوں میں ملوث ہیں ڈاکٹروں اور نرسوں کو ڈیوٹی کرتے ہیں اے ایم ایس پر تشدد کرنے میں ملوث ہیں ان کی مجرمانہ غفلت کے باعث ایک مریض بھی دم توڑ گیا ان کا یہ فعل ان کے حلف نامے کے برعکس ہے آج صبح آٹھ بجے تک اگر یہ اپنی ڈیوٹی پر واپس نہ آئے تو پھر انہیں ملازمت سے برطرف کردیا جائے گا۔

مزید :

صفحہ آخر -