بابا گورو نانک یونیورسٹی پراجیکٹ پر تیزی سے کام جاری ہے، صدیق الفاروق

بابا گورو نانک یونیورسٹی پراجیکٹ پر تیزی سے کام جاری ہے، صدیق الفاروق

  

لاہور (خبر نگار)چیئرمین متروکہ وقف املاک بورڈ محمد صدیق الفاروق نے کہا کہ ملک اور مذہب جوبھی ہو ہم سب نے مل کر انسانیت کے لیے کام کرنا ہے بابا گورو نانک یونیورسٹی اور گندھارا یونیور سٹی کے قیام کے لیے وزیر اعظم کی مکمل سرپرستی حاصل ہے اور ان پراجیکٹ پر تیزی سے کام جاری ہے یہ یونیورسٹیاں جدید علوم اور سہولیات سے آراستہ ہوں گی یہ باتیں انہوں نے اس سلسلہ میں قائم ایڈوائزری کمیٹی کے کامسٹس یونیورسٹی میں منعقدہ تیسرے اجلاس سے خطاب اور بعد ازاں میڈیا کے نمائندوں کو بریفنگ دیتے ہوئے کہیں ،انہوں نے مزید کہا کہ ان یونیوسٹیز کے ذریعے دنیا بھر سے اقلتوں سے رابطہ بڑھے گا اور جسکی وجہ سے مذہبی سیاحت کے ساتھ ساتھ قومی معیشت میں اضافہ ہو گی ،وزیر اعظم پاکستان جنوری 2017میں بابا گورو نانک انٹرنیشنل یونیورسٹی کا سنگ بنیاد رکھیں گے پراجیکٹ ڈائریکٹر سمیت دیگر پوسٹوں کے لیے میرٹ اور قابلیت کی بنیاد پر بھر تیاں کی جائیں گی ۔ اجلاس میں نسرین مہدی ،کرنل (ر)مبشر جاوید ، اسماعیل درانی ،عائشہ حامد ،الیگزینڈر جان ملک ،عزت جہاں ،کانجی رام ،شاہد صدیقی ،قیصر جاوید ،شاہد سرویا ،شیخ محمد جاوید ،طاہر نعیم سمیت دیگر نے شرکت کی ۔کمیٹی کی فوکل پرسن نسرین مہدی نے یونیورسٹیز کے پراجیکٹ کے حوالے سے اب تک کی کارکردگی بارے مکمل رپورٹ پیش کی ۔دریں اثناء قومی اسمبلی کے قائد حزب اختلاف سید خورشید احمد شاہ نے بنی گالا میں چیئرمین بورڈ محمد صدیق الفاروق سے انکی رہائش گاہ پر ملاقات کی اور ان سے انکے جواں سالہ بیٹے علی فاروق کی وفات پر تعزیت کرتے ہوئے انتہائی دکھ کا اظہارکیا اورمرحوم کی مغفرت کے لیے فاتحہ خوانی کی ۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -