پی ٹی آئی کے دور حکومت میں ادارے مفلوج ہوچکے ہیں ،سردار حسین بابک

پی ٹی آئی کے دور حکومت میں ادارے مفلوج ہوچکے ہیں ،سردار حسین بابک

  

کرک ( بیورورپورٹ)عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری اور سابق صوبائی وزیر تعلیم سردار حسین بابک نے کہا ہے کہ ناکام صوبائی حکومت کی وجہ سے صوبے کے ادارے مفلوج ہیں اور صوبہ مالی ، انتظامی اور پارلیمانی بحران کا اعزاز حاصل کر چکی ہے نام نہاد تبدیلی کے نام پر سازش کے تحت پختونوں کو مزید کمزور کیا گیا سی پیک کے حوالے سے وزیر اعظم نے جو وعدے کیئے تھے ان کو ایفا کرے کیونکہ وہ صرف پنجاب کا وزیر اعظم نہیں سی پیک سمیت مرکز سے دیگر حقوق کے حصول اور ظلم وانصافی کا راستہ روکنے کیلئے پختونوں کو قائد اسفند یار ولی خان کی قیادت میں متحد ہو نا ہوگا ان خیالات کااظہار انہوں نے ضلع کرک کی تحصیل تخت نصرتی میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کیا انہوں نے مزید کہا کہ کرپشن کے خاتمے کا ڈنڈورا پیٹنے والے بتائے کہ کرک سے چوری ہونیوالے اربوں روپے کے کروڈ آئل کی تحقیقات کہا ں تک پہنچی حیران ہوں کہ نیب ، انٹی کرپشن اور احتساب کمیشن نے اس حوالے سے ابھی تک کیا کچھ کیا ہے ؟انہوں نے مزید کہا کہ ہارون بلور کے قافلے پر حملہ بزدلی کی واضح مثال ہے ہم عدم تشدد کے فلسفے کے قائل ہیں صوبے کا وزیر اعلیٰ سیاست کو سیاست ہی رہے دیں بصورت دیگر اینٹ کا جواب پتھر سے دینگے انہوں نے تقریر کے دوران امیر حیدر ہوتی کو صوبے کا آئندہ وزیر اعلیٰ قرار دیا اور کہا کہ صوبے کے پختون سرخ جھنڈے تلے متحد ہو رہے ہیں کرک کے عوام کا جذبہ دیکھ کر حوصلے مزید بڑھا ہے اور صوبے میں آئندہ عوامی نیشنل پارٹی ہی کی حکومت آئیگی ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -