سپریم کورٹ قرضے معاف کرانے والوں کے خلاف اَز خود نوٹس لے ،اپوزیشن میں بیٹھنے سے چور فرشتہ نہیں بن جاتا :سینیٹر سراج الحق

سپریم کورٹ قرضے معاف کرانے والوں کے خلاف اَز خود نوٹس لے ،اپوزیشن میں بیٹھنے ...
سپریم کورٹ قرضے معاف کرانے والوں کے خلاف اَز خود نوٹس لے ،اپوزیشن میں بیٹھنے سے چور فرشتہ نہیں بن جاتا :سینیٹر سراج الحق

  

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے سپریم کورٹ سے اپیل کی ہے کہ اسٹیٹ بنک سے قرضے معاف کرانے والوں کی لسٹیں لے کر ان کے خلاف از خود نوٹس لیا جائے اور قومی دولت ہڑپ کرنے والوں سے ایک ایک پائی وصول کرنے کا حکم دیا جائے،ملک میں کرپشن کا ذمہ دار کوئی چوکیدار یا مزدور نہیں ، 70 سال سے اقتدار پر قابض ٹولے نے قومی دولت کو لوٹا اور ملک کو آئی ایم ایف اور ورلڈ بنک کا اسیر بنایا،اپوزیشن میں بیٹھنے سے چور فرشتہ نہیں بن جاتا،حکومت اور اپوزیشن میں موجود سب لٹیروں کا احتساب ہوناچاہیے اور اس سلسلہ میں کسی سے رعایت نہ برتی جائے۔ ڈونلڈ ٹرمپ کو ایک ذمہ دار عالمی راہنما کے طور پر اپنا تشخص اجاگر کرنے کے لیے مسلم ممالک سے اپنی فوجیں نکالی جائیں، مسلمانوں کے وسائل پر قبضہ کرنے کی سوچ ختم کی جائے اور اسلام سمیت تمام مذاہب کے ساتھ رواداری کا مظاہرہ کرناچاہئے۔

مزید پڑھیں:پاناما پیپرز کا مسئلہ عمران خان نے ڈراما بنایا ہوا ہے:مولانا فضل الرحمان

منصورہ میں منعقدہ ’’ورکرز کنونشن‘‘ سے خطاب کرتے ہوئے سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ قوم نے حکومت کی باگ ڈور لاڑکانہ کے وڈیروں کے ہاتھ میں دی اور لاہور کے سرمایہ داروں کو بھی آزمایا، مگر جو بھی حکومت میں آیا ، اس نے قومی دولت کو شیر مادر سمجھ کر لوٹا اور قوم کے مسائل حل کرنے کی بجائے ان میں اضافہ کیا، ملک میں کوئی بھی حکومت ہو ، ہمیشہ اس نے اپنے ہی مفادات سمیٹے، بار ی باری حکومت میں آنے والے ایک دوسرے کی کرپشن کو تحفظ دیتے اور اپنے اقتدار کو طول دینے کے لیے عوام کو مسلکوں ، قومیتوں اور علاقائی بنیادوں پر تقسیم کر کے ان کے درمیان نفرت کی آگ بھڑکاتے اور دشمنیاں پھیلاتے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ سپریم کورٹ بنیادی سہولتوں سے محروم 20 کروڑ عوام کی فریاد سنے اور لٹیروں کا احتساب کرے۔سینیٹر سراج الحق نے قوم سے بھی اپیل کی کہ وہ بار بار آزمائے ہوئے لوگوں کے بجائے دیانتدار قیادت کا انتخاب کریں۔

مزید :

قومی -