’ٹرمپ صدر بن گیا، اب اگلے سال ایٹمی جنگ ہوگی کیونکہ۔۔۔‘ دنیا کے معروف ترین جنگی ماہر نے خوفناک پیشنگوئی کردی

’ٹرمپ صدر بن گیا، اب اگلے سال ایٹمی جنگ ہوگی کیونکہ۔۔۔‘ دنیا کے معروف ترین ...
’ٹرمپ صدر بن گیا، اب اگلے سال ایٹمی جنگ ہوگی کیونکہ۔۔۔‘ دنیا کے معروف ترین جنگی ماہر نے خوفناک پیشنگوئی کردی

  

ماسکو(مانیٹرنگ ڈیسک) ڈونلڈ ٹرمپ کے امریکہ کا صدر منتخب ہونے پر معروف جنگی ماہر اور نیٹو فورسز کے کمانڈر سر رچرڈ شیرف نے ایک سال کے اندر اندر تیسری عالمی جنگ کی لرزہ خیز پیش گوئی کر دی ہے۔ برطانوی اخبار دی میٹرو کی رپورٹ کے مطابق جنرل رچرڈ شیریف کا کہنا ہے کہ ”ڈونلڈ ٹرمپ اپنی انتخابی مہم میں روسی صدر ولادی میر پیوٹن کے متعلق بڑی گرمجوشی سے بات کرتے رہے ہیں، لیکن اس سے روس اور امریکہ کی جنگ کے امکانات میں اضافہ ہو گا، کمی نہیں آئے گی۔ ڈونلڈ ٹرمپ کے ایسے بیانات سے روس کو مزید خطرناک اقدامات کرنے کی شہ ملے گی جس سے حالات کی سنگینی میں اضافہ ہو گا۔ ممکنہ طور پر روس بالٹک ریاستوں پر چڑھائی کرنے کے بعد کسی نیٹو ملک پر بھی ایٹمی حملہ کر دے گا جس سے تیسری عالمی جنگ چھڑ جائے گی۔ مجھے یہ سب کچھ ایک سال کے اندر ہوتا نظر آ رہا ہے۔“

صدر منتخب ہوتے ہی ڈونلڈ ٹرمپ نے ایسا کام کر دیا کہ سب کو حیران کر دیا، مسلمانوں کے حق میں بڑا قدم اٹھا لیا

دی اٹلانٹک کو انٹرویو دیتے ہوئے جنرل رچرڈ کا کہنا تھا کہ ”نیٹو افواج کلی طور پر امریکی قیادت پر انحصار کرتی ہیں۔ نیٹو کا اتحادیوں کی غیرمشروط مدد کے لیے آگے آنا امریکیوں کی رضامندی کے تحت ہوتا ہے۔ایسے میں اگر وائٹ ہاﺅس میں ایک شخص موجود ہو جو یہ سب کرنے پر آمادہ نہ ہو تو اس سے اتحاد بہت زیادہ کمزور ہو جائے گا اور انجام کار امریکہ یورپی دفاع سے الگ ہو جائے گا۔ ہمیں ولادی میر پیوٹن کو اس کے اقدامات سے پہچاننے کی ضرورت ہے، نہ کہ اس کے الفاظ سے۔ وہ جارجیا، کریمیا اور یوکرین پر حملہ کر چکا ہے۔“

مزید :

بین الاقوامی -