ہائی کورٹ کے ڈویژن بنچ نے معلومات کی فراہمی کے لئے شہریوں کی شناخت اور شہریت کی تصدیق لازمی قرار دے دی

ہائی کورٹ کے ڈویژن بنچ نے معلومات کی فراہمی کے لئے شہریوں کی شناخت اور شہریت ...
ہائی کورٹ کے ڈویژن بنچ نے معلومات کی فراہمی کے لئے شہریوں کی شناخت اور شہریت کی تصدیق لازمی قرار دے دی

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی )لاہور ہائیکورٹ کے ڈویژن بنچ نے معلومات کی فراہمی کے لئے شہریوں کی شناخت اور شہریت کی تصدیق لازم قرار دیتے ہوئے عدالت عالیہ کے سنگل بنچ کے فیصلے کو کالعدم قرار دے دیاہے۔جسٹس محمد فرخ عرفاں خان کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے کیس کی سماعت کی۔پنجاب یونیورسٹی کی جانب سے ایڈیشنل رجسٹرار ڈاکٹر کامران نے انٹراکورٹ اپیل میں موقف اختیار کیا کہ پنجاب ٹرانسپیرنسی اینڈ رائٹ ٹو انفرمیشن ایکٹ کے تحت کسی بھی شہری کی شہریت کی تصدیق کئے بغیر اسے معلومات فراہم نہیں کی جا سکتیں۔انہوں نے عدالت کو آگاہ کیا کہ پنجاب انفارمیشن کمیشن اور عدالت عالیہ کے سنگل بنچ نے قانونی تقاضے پورے کئے بغیر شہری کی شناخت اور شہریت کی تصدیق کے بغیرپنجاب یونیورسٹی کو معلومات فراہم کرنے کے احکامات صادرکئے ،عدالت سنگل بنچ کے فیصلے کو کالعدم قرار دے جس پر عدالت نے فریقین کے وکلاءکے دلائل سننے کے بعد معلومات کی فراہمی کے لئے شہریوں کی شناخت اور شہریت کی تصدیق لازم قرار دیتے ہوئے عدالت عالیہ کے سنگل بنچ کے فیصلے کو کالعدم قرار دے دیاہے۔

مزید :

لاہور -