وفاقی حکومت گورنر سندھ کی تبدیلی پر صوبائی حکومت کو اعتماد میں لیتی تو کوئی قباہت نہیں تھی ،عشرت العباد کا نام ای سی ایل میں شامل کرنے کی باتیں مناسب نہیں:نثار کھوڑو

وفاقی حکومت گورنر سندھ کی تبدیلی پر صوبائی حکومت کو اعتماد میں لیتی تو کوئی ...
وفاقی حکومت گورنر سندھ کی تبدیلی پر صوبائی حکومت کو اعتماد میں لیتی تو کوئی قباہت نہیں تھی ،عشرت العباد کا نام ای سی ایل میں شامل کرنے کی باتیں مناسب نہیں:نثار کھوڑو

  

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) سندھ کے سینئر وزیر نثار احمدکھوڑو نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت گورنر سندھ کو تبدیل کرنے کے متعلق اگر صوبائی حکومت کو اعتماد میں لیتی تو اس میں کوئی قباحت نہیں تھی،گورنر کی تقرری اور برطرفی وفاقی حکومت کا اختیار ضرور ہے تاہم گورنر سندھ کو اچانک ہٹاناکچھ لوگوں کو عجیب ضرورلگا ہے،سندھ کابینہ میں توسیع یا تبدیلی ہوتی رہتی ہے، کابینہ میں تبدیلی پارٹی اور حکومت کا اختیار ہے۔

مزید پڑھیں:ڈاکٹر عمران فاروق کو الطاف حسین کو سالگرہ کا تحفہ دینے کیلئے قتل کیا :ملزم شمیم کا اعترافی بیان

مقامی ہوٹل میں’’کنزیومر فوڈ سیفٹی کانفرنس‘‘ کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ سبکدوش گورنر عشرت العباد پر کوئی نیا مقدمہ نہیں بنا ،اس لئے ان کا نام ای سی ایل میں شامل کرنے کی باتیں مناسب نہیں ،آئینی طور پر عشرت العباد عہدے سے ہٹنے کے بعد دو سال تک سیاست میں حصہ نہیں لے سکتے،فی الحال ان کے سیاست میں آنے کی باتیں قبل از وقت ہیں۔ نثار کھوڑو نے کہا کہ دو سال کی پابندی کے بعد عشرت العباد سیاست میں حصہ لینگے یا نہیں یہ بعد میں ہی پتہ چلے گا۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ سندھ کابینہ نے سندھ فوڈ اتھارٹی بل کی منظوری دے دی ہے اورسندھ فوڈ اتھارٹی بل کو سندھ اسمبلی کے پیر سے شروع ہونے والے اجلاس میں کسی بھی دن منظوری کے لئے پیش کردیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ سندھ میں غیر معیاری اشیاء کی فروخت میں اپنے ہی صوبے کے لوگ ملوث ہیں اس لئے اپنے گھر کو بہترکرنے کی ضرورت ہے۔

مزید :

کراچی -