پی کے ایل آئی جدید ترین ریڈیالوجی خدمات فراہم کرنے کی طرف گامزن

پی کے ایل آئی جدید ترین ریڈیالوجی خدمات فراہم کرنے کی طرف گامزن

لاہور(پ ر)ریڈیالوجی میں ٹیکنالوجی کی ترقی نے جسمانی بیماریوں کی تشخیص اور علاج میں ایک انقلاب پیدا کردیا ہے، یہ بات پاکستان کڈنی اینڈ لیور انسٹیٹیوٹ اینڈ ریسرچ سینٹر کے چیئرمین ڈیپارٹمنٹ آف کلینیکل ریڈیالوجی ڈاکٹر امجد اقبال نے ورلڈ ریڈیوگرافی ڈے کے موقع پر صحافیوں کے ایک وفد سے بات کرتی ہوئے کہی۔انہوں نے مزید کہا کہ جدید ریڈیالوجی کے فوائد میں گردے اور جگر کی بیماریوں سمیت دیگر بیماریوں جیسا کہ کینسر کی تشخیص اور علاج بھی شامل ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ مختلف پیچیدہ جسمانی مسائل کی مؤثر جانچ پڑتال و انتظام اور سرجری کی ضرورت کی فیصلہ سازی بھی جدید ریڈیالوجی کی مرہون منت ہے۔ ڈاکٹر امجد نے بتایا کہ پی کے ایل آئی کا شعبہ ریڈیالوجی اور میڈیکل امیجنگ، اب تک 16000مریضوں کو ریڈیالوجی کی خدمات فراہم کر چکا ہے۔ شعبہ میں جدید ترین ٹیکنالوجی مشینری موجود ہے جس میں ڈیجیٹل ریڈیوگرافی، کمپیوٹڈ ٹوموگرافی شامل ہیں۔ بہت جلد ہسپتال میں ایم آر آئی، تھری ڈی فیوژن ٹیکنالوجی اور ہائی کلاس نیوکلیئر میڈیکل امیجنگ بشمول پی ای ٹی سی ٹی کی سہولیات میسر ہونگی۔ ان سہولیات کو فراہم کرنے کیلئے یو کے، یو ایس اے اور کینیڈا سے اعلیٰ تربیت یافتہ ماہرین موجود ہیں۔ اس وقت ریڈیالوجی شعبہ میں مریضوں کو جگر کی بیماریوں کی بغیر سرجری ابتدائی سکریننگ اور جگر کی صورتحال کے تعین کیلئے فائبروسکین کی سہولت میسر ہے۔

فائبروسکین سے جگر کے کینسر یعنی فائبروسس کی ابتدائی تشخیص بھی ممکن ہوتی ہے۔اس کے علاوہ پی کے ایل آئی میں گردے، جگر اور دیگر جسمانی اندرونی اعضاء کی درست جانچ، تشخیص و علاج کیلئے انٹروینشنل ریڈیالوجی کی ایک وسیع رینج موجود ہے جس میں ون سٹاپ لیور ڈیزیز کلینک، ون سٹاپ ایچ سی سی کلینک، ون سٹاپ ہیماچوریا کلینک، ون سٹاپ مثانے کے ٹیومر کا کلینک، اور ون سٹاپ TIA, MSK اینڈوکرائین اور پلمونالوجی کلینک شامل ہیں۔

ڈاکٹر امجد اقبال نے بتایا کہ پی کے ایل آئی شعبہ ریڈیالوجی ، بہت جلد، جدید ترین خدمات متعارف کروا ئے گا جس میں TARE, TIPPS, DIPPS پروسٹیٹ آرٹری اور بیریاٹرک ایموبلائزیشن، سٹروک مینجمنٹ شامل ہیں۔ اس کے علاوہ کٹنگ ایج ٹیکنالوجی میں ون سٹاپ نان انویسو کارنری اسیسمنٹ، پھیپھڑوں اور بڑی آنت کے کینسر کی سکریننگ اور لائف سکین PK سروسز شامل ہیں جو اس وقت پاکستان میں دستیاب نہیں ہیں۔

ڈاکٹر امجد نے پی کے ایل آئی کے شعبہ ریڈیالوجی کے بارے میں اظہار کیا کہ ادارہ تمام مریضوں بشمول مستحق مریضوں کوبلا تفریق اعلیٰ ترین معیار کی خدمات فراہم کرنے کیلئے اپنی پوری کوشش کررہا ہے اور میڈیسن میں جاری تحقیق کے ذریعے مریضوں کے معیار صحت کو بہتر بنانے کیلئے وقف ہے۔

مزید : کامرس